حماس اور اسرائیل کے درمیان قیدیوں کی تیسری کھیپ کا تبادلہ مکمل

39 اسرائیلیوں کے بدلے 117 فلسطینی رہا، ہفتہ تک غزہ لائی گئی طبی امداد کا حجم 2675 ٹن ہوگیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اتوار کی شام اسرائیل اور حماس نے قیدیوں کی تیسری کھیپ کا تبادلہ مکمل کرلیا۔ حماس نے 13 اسرائیلی یرغمالیوں کو چھوڑ دیا اور بدلے میں اسرائیل نے جیلوں میں قید 39 فلسطینی رہا کردئیے۔ تین روز میں حماس 39 اسرائیلی یرغمالیوں کو رہا کر چکی اور بدلے میں 117 فلسطینی قیدی رہائی پاکر مغربی کنارے پہنچ گئے ہیں۔
اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو کے دفتر نے اسرائیلی زیر حراست افراد کی ملک میں آمد کی تصدیق کی ہے اور بتایا کہ اتوار کو وطن واپس آنے والے اسرائیلی یرغمالیوں میں میں 9 کم سن، 4 خواتین اور ایک مرد شامل ہیں۔ حماس نے تیسرے روز بھی معاہدہ سے الگ مزید 5 غیر ملکی شہریوں کو بھی رہا کیا۔
حماس نے اس سے قبل کہا تھا کہ اس نے 13 اسرائیلی یرغمالیوں، تین تھائی اور دو روسی شہریوں کو ریڈ کراس کے حوالے کیا ہے۔

جنگ بندی کے تیسرے روز اسرائیل سے رہا ہوکر رام اللہ پہنچنے والے فلسطینی قیدی کا استقبال کیا جارہا
جنگ بندی کے تیسرے روز اسرائیل سے رہا ہوکر رام اللہ پہنچنے والے فلسطینی قیدی کا استقبال کیا جارہا


مصری انفارمیشن سروس کی سربراہ دیا رشوان نے ایک بیان میں کہا کہ جنگ بندی بغیر کسی رکاوٹ کے جاری ہے۔ اتوار کو 120 امدادی ٹرک مصر سے غزہ پہنچے جن میں دو ایندھن کے ٹرک اور دو کوکنگ گیس ٹرک شامل ہیں۔
انہوں نے انکشاف کیا کہ کل شام تک غزہ کی پٹی میں لائی جانے والی طبی امداد کا حجم 2,675 ٹن تھا جب کہ غذائی امداد کا حجم 9,621 ٹن تھا اور پانی کا حجم 7,047 ٹن تک پہنچ گیا تھا۔ 82 خیمے اور ترپالیں اور اسی طرح 1992 ٹن دیگر امدادی سامان بھی غزہ پہنچ گیا ہے۔
رشوان نے کہا کہ ہفتہ کی شام تک 788 ٹن ایندھن لایا جا چکا ہے۔ اسٹیٹ انفارمیشن سروس کے سربراہ نے بتایا کہ مصر کو اس عرصے کے دوران غزہ سے لائے گئے 353 زخمی موصول ہوئے ہیں۔

Advertisement
مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں