غزہ میں جنگ بندی کی خلاف ورزیاں،فلسطینی دھڑوں کی مستقل جنگ بندی کی اپیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

منگل کو غزہ کی پٹی کے شمال اور جنوب میں کئی علاقوں میں اسرائیل اور فلسطینی دھڑوں کے درمیان عارضی جنگ بندی کے دوران ہونے والی خلاف ورزیوں کے جلو میں فلسطینی دھڑوں نے مستقل جنگ بندی کا مطالبہ کیا ہے۔

ایک مشترکہ بیان میں انہوں نے "غزہ پر وحشیانہ جنگ کو جامع انداز میں روکنے کی ضرورت پر زور دیا۔‘‘

انہوں نے کہا کہ وہ اسرائیلی افواج کی طرف سے عارضی جنگ بندی کی خلاف ورزیوں پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں اور ثالثوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ خلاف ورزیوں کو روکنے کے لیے اپنی ذمہ داریاں پوری کریں۔

غزہ کے زخمی

فلسطینی دھڑوں نے قیدیوں کے معاہدے اور عارضی جنگ بندی میں مصری اور قطری کردار کو سراہا۔

انہوں نے مصر سے اپیل کی کہ وہ غزہ میں جنگ کے دوران زخمی ہونےوالوں کو علاج کے لیے جانے کی اجازت دے۔

العربیہ اورالحدث کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق فلسطینی دھڑوں کی طرف سے یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب دوسری طرف اسرائیلی فورسز کی جانب سے غزہ شہر کے مغرب میں اورغزہ کی پٹی کے شمال میں واقع الشاطی کیمپ اور الشیخ رضوان کے پڑوس میں فائرنگ کے واقعات کے بعد سامنے آیا ہے۔

خیال رہے کہ کل سوموار کو مصر اور قطر کی کوششوں سے غزہ میں جنگ بندی کی مدت میں دو دن کی توسیع کی گئی تھی۔

جنگ بندی کے پہلے مرحلے میں 68 اسرائیلی قیدیوں اور دوسرے ملکوں کے یرغمالیوں کو رہا کیا گیا جس کے بدلے میں اسرائیل نے 150 فلسطینی خواتین اور بچوں کو رہا کیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں