"ہم غزہ کو صفحہ ہستی مٹانا چاہتے ہیں"، نیا اشتعال انگیز عبرانی گانا وائرل

سوشل میڈیا پرفلسطینیوں سے نفرت کے غماز وائرل ہونے والے اس متنازع عبرانی گیت پر عوامی حلقوں کی طرف سے شدید ردعمل سامنے آیا ہے۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بیس نومبر کو اسرائیل میں "دوستی" کے عنوان سے نشر کیے گئے ایک متنازع اسرائیلی گیت کے بعد ایک نیا اور اشتعال انگیز گانا ریلیز ہوا ہے جس کے کچھ بول "ہم غزہ کو مٹا دینا چاہتے ہیں‘‘ کے نفرت انگیز اور اشتعال انگیز الفاظ پر مبنی ہے۔ خیال رہے کہ چند روز قبل سامنے آنے والے متنازع عبرانی گانے میں ’’ہم غزہ کی پٹی کے خاتمےکا مطالبہ کرتے ہیں‘‘۔ جیسے الفاظ شامل کیے گئے تھے۔

گذشتہ چند گھنٹوں کے دوران سوشل میڈیا پر وائرل ہونےوالے اسرائیلی"طنزیہ گانے" کے اقتباسات کو اشتعال انگیز قرار دیا گیا ہے۔ اس گانے پر سوشل میڈیا پر شدید غم وغصے کی لہر دوڑ گئی۔

گانے کے ویڈیو کلپ میں ایک خاتون کو غزہ میں کچھ فلسطینی خواتین کے لباس سے ملتا جلتا لباس پہنے ہوئے دکھایا گیا ہے، جو 3 بچوں کو پرتشدد الفاظ سکھا رہی ہے جو ان کے سروں پر نقاب اوڑھے طالب علموں کا کردار ادا کر رہے ہیں‘‘۔

"میزائل کے بعد میزائل"

کلپ میں نظر آنے والے تین چھوٹے بچوں نے مبینہ استانی کے ساتھ یہ جملہ دہرانا شروع کیا "ہم غزہ کا صفایا کرنا چاہتے ہیں"۔

انہوں نے فلسطینی غزہ کی پٹی پر گرنے والے میزائلوں کی بھی تعریف کی جو حماس اور اسرائیل کے درمیان گذشتہ 7 اکتوبر سے محاصرے میں ہے۔

انہوں نے حماس کو دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ "ہماری فوج آپ کے پاس آ رہی ہے اور ہم آپ کو ختم کر دیں گے"۔

گانے کے مزید الفاظ ہیں کہ"اسرائیلی ناقابل تسخیر ہیں جو اپنا پرچم سربلند رکتھےہیں‘‘۔

دوسری جانب سوشل میڈیا بالخصوص ’ایکس‘ پلیٹ فارم پر اس متنازع اور اشتعال انگیز گانے کی شدید الفاظ میں مذمت کی جا رہی ہے۔

خیال رہے کہ غزہ کی پٹی میں ڈھائی جانے والی قیامت خیز تباہی کے دوران اسرائیلی عوامی حلقوں کی طرف سے اس نوعیت کے نفرت آمیز مظاہر مختلف شکلوں میں دیکھنے کو مل رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں