فلسطین اسرائیل تنازع

دو ریاستی حل کے حصول کے لیے عالمی محاذ تشکیل دیا جائے: فلسطینی وزیر اعظم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطینی وزیر اعظم محمد اشتیہ نے کہا ہے کہ غزہ کی پٹی یا مغربی کنارے کے جزوی حل کے بارے میں بات کرنا ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے ایک مخصوص ٹائم ٹیبل کے اندر دو ریاستی حل کے حصول کے لیے بین الاقوامی محاذ کی تشکیل پر زور دیا۔

اشتیہ نے فلسطینی عوام کے ساتھ یکجہتی کے عالمی دن کے موقع پر ایک تقریب سےخطاب میں مزید کہا کہ "ہم دو ریاستی حل کے حصول کے لیے ایک بین الاقوامی محاذ چاہتے ہیں۔ یہ محاذ ریاست فلسطین کی زمینوں پر اسرائیل کے غیر قانونی قبضے کو ختم کرنے کےلیے ایک ٹائم فریم کے تحت کام کرے‘‘۔

جامع اور دیر پا حل

فلسطینی وزیر اعظم نے اس بات پر بھی زور دیا کہ "غزہ یا مغربی کنارے کے لیے جزوی حل کے بارے میں بات کرنا ممکن نہیں ہے۔ حل جامع اور مربوط ہونا چاہیے، جس میں غزہ اور مغربی کنارے، بشمول یروشلم اور پناہ گزینوں کی واپسی کا حق ہونا چاہیے"۔

محمد اشتیہ نے غزہ میں جبری نقل مکانی کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ "آج ہم غزہ کی پٹی سے اپنے بچوں کی جبری نقل مکانی کو نہیں، غزہ کی پٹی کے کچھ حصوں پر اسرائیلی قبضے کو نہیں اور بفر زونز کا قیام نہیں چاہتے‘‘۔

انہوں نے جنگ بندی، غزہ کی پٹی میں امداد کی ترسیل اور اسرائیل کو ایک "قابض ریاست" کے طور پر انسانی امداد کی فراہمی اور پٹی میں تمام گزرگاہوں کو کھولنے کا ذمہ دار ٹھہرانے کا بھی مطالبہ کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں