سعودی وزیرِ دفاع کی اقوامِ متحدہ کے ایلچی برائے یمن اور ایرانی فوجی سربراہ سے بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے وزیرِ دفاع شہزادہ خالد بن سلمان اور یمن کے لیے اقوامِ متحدہ کے خصوصی ایلچی ہانس گرنڈ برگ نے جمعرات کو یمن تنازعے کی تازہ ترین پیش رفت پر تبادلۂ خیال کیا۔

ریاض میں ملاقات کے بعد شہزادہ نے بعد میں سوشل میڈیا سائٹ ایکس پر پوسٹ کیے گئے ایک پیغام میں کہا، "ہم نے یمن میں امن عمل کی حمایت کے لیے مملکت کی کوششوں کے ساتھ ساتھ یمنی فریقین کے درمیان روڈ میپ کا جائزہ لیا تاکہ اقوامِ متحدہ کی نگرانی میں ایک جامع اور پائیدار سیاسی حل تک پہنچا جائے۔"

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق اس ملاقات میں یمن میں سعودی سفیر محمد الجابر اور وزیرِ دفاع کے دفتر کے ڈائریکٹر جنرل ہشام بن عبدالعزیز بن سیف بھی موجود تھے۔

سعودی وزیرِ دفاع کی اقوامِ متحدہ کے ایلچی برائے یمن اور ایرانی فوجی سربراہ سے بات چیت

اقوامِ متحدہ کے شرکاء میں گرنڈ برگ کی معاونِ خصوصی لینے ہنکس؛ ایلچی کے دفتر میں سیاسی امور کی سربراہ روزانے بیزرگن؛ اور ایلچی کے ایک مشیر اپریل ایلی شامل تھے۔

جمعرات کے روز شہزادہ خالد کو ایرانی مسلح افواج کے چیف آف سٹاف میجر جنرل محمد باقری کی ٹیلی فون کال موصول ہوئی جس کے دوران انہوں نے اپنے ممالک کے درمیان فوجی اور دفاعی شعبوں میں تعلقات کا جائزہ لیا اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلۂ خیال کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں