اسرائیل فوج غزہ میں حماس کی سرنگوں کمانڈ سنٹر اور بارودی گوداموں پر حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے اتوار کے روز اپنے حملوں کے حوالے سے بتایا ہے کہ اس نے غزہ میں حماس کی عسکری طاقت کے مراکز کو نشانہ بنایا ہے، ان مراکز میں حماس کی پیچیدہ سرنگیں، کمانڈ سنٹرز اور بارود رکھنے کے گودام شامل ہیں۔

فوج کے جاری کردہ بیان کے مطابق رات کے وقت اسرائیلی جنگی طیاروں اور ہیلی کاپٹروں نے غزہ میں اپنے اہداف کو نشانہ بنانے کی کوشش کی ۔

اسرائیلی فوج کے مطابق ان اہداف میں حماس کی سرنگوں ،عسکری قیادت کے مراکز اور بارود رکھنے کے لیے قائم گودام شامل تھے۔ اس سلسلے میں غزہ میں زمین پر موجود اسرائیلی فوج فضائیہ کو انٹیلی جنس فراہم کرتی رہی اور فضائیہ نے اس انفارمیشن کی بنیاد پر بمباری کی۔

اسرائیل کی فوج کے دعوے کے مطابق ان حملوں کے نتیجے میں حماس کا عسکری انفراسٹرکچر ، بحری ضرورتوں کے لیے استعمال ہونےوالی کشتیاں، اور حماس کی بحری شعبے سے متعلق ہتھیار وغیرہ بھی نشانہ بنائے گئے ہیں۔

اسرائیلی فوج نے یہ دعویٰ ہفتے کے روز کے بیان کے بعد کیا ہے ۔ ہفتے کے روز اسرائیلی فوج نے بیان دیا تھا کہ حماس کے بٹالین کمانڈر کو ہلاک کر دیا ہے۔ اسرائیلی فوج کے بیان کے مطابق یہ حماس کمانڈر کئی اہم کارروائیوں کے لے ذمہ دار تھا۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان رئیر ایڈمرل ڈینئیل ہیگری نے کہا ' ہماری فوج غزہ کی کارروائیاں آگے بڑھا رہی ہیں۔ اسرائیلی فوج اور آئی ایس اے نے دہشت گرد وسام فرحت کو ہلاک کیا ہے۔ وہ ایک بٹالین کمانڈر تھا۔'

ایڈمرل ہیگری نے یہ بھی کہا ' ہم ان دہشت گردوں کا تعاقب جاری رکھیں گے جنہوں نے سات اکتوبر کے حملوں میں حصہ لیا تھا۔۔۔۔ اب ہمارا ہدف حماس کا خاتمہ اور اس کی تباہی ہے۔ شمالی غزہ میں ہم نے فوجی دباؤ بڑھایا ہے جس کی وجہ سے انہیں کچھ یرغمالیوں کی رہائی پر مجبور ہونا پڑا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں