صدر اپنی غلطیوں کی وجہ سے مقبولیت کھو چکے ہیں: کیئف کے مئیر زیلنسکی پر برس پڑے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

روسیوں کے ساتھ مذاکرات کو قبول کرنے کے لیے یوکرین پر بڑھتے ہوئے مغربی دباؤ کے ساتھ اور صدر کی جانب سے معاملے کو مکمل طور پر مسترد کیے جانے کے جلو میں کیف کے میئر وٹالی کلِٹسکو نے یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلینسکی پرسخت تنقید کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ صدر کی غلطیوں کی وجہ سے ان کی عوامی مقبولیت میں کمی آ رہی ہے۔

'وہ اقتدار کھو دیں گے'

یوکرینی دارالحکومت کے میئر کا کہنا ہے ہے یوکرین کے صدر اپنی غلطیوں کی بھاری قیمت چکائیں گے اور اقتدار سے محروم ہوں گے‘‘۔ یہ ایک نادر حیرت انگیز سرزنش ہے جو یوکرین کے کسی جونیر عہدیدار کی طرف سےصدر کو دی گئی ہے۔

ٹیلی گراف کے مطابق کلٹسکو نے دو انٹرویو لینے والوں کو بتایا کہ زیلنسکی تیزی سے تنہا اور آمرانہ رویہ اختیار کرتےجا رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ زیلنسکی اپنی غلطیوں کی قیمت ادا کر رہے ہیں۔ انہوں نے صدر کو مورد الزام ٹھہراتے ہوئے کہا کہ فروری 2022 میں روسی حملے کے بارے میں انتباہات کو نظر انداز کیا۔ یہ وہ ناکامیاں ہیں جن کی وجہ سے روسی فوج کیف تک پہنچ گئی۔

سابق ورلڈ ہیوی ویٹ باکسنگ چیمپئن جو 2014 سے کیئف کے میئر کے طور پر خدمات انجام دے چکے ہیں زیلنسکی کے سیاسی مخالف ہیں۔ ان کے تبصرے 21 ماہ کی جنگ کے بعد صدر کے خلاف بڑھتے ہوئے عدم اطمینان اور نیٹو کی حمایت یافتہ ناکام جوابی کارروائی کی عکاسی کرتے ہیں۔

کلسٹکو نے اعلان کیا تھا کہ انہوں نے یوکرین کی مسلح افواج کے سپریم کمانڈر ویلری زلوزنی سے اتفاق کیا ہے کہ جنگ "اختتام " کو پہنچ چکی ہے۔

"جنگ ختم کرنے کا وقت آ پہنچا"

یہ پیش رفت زیلنسکی کے سابق مشیر اولیسکی ارستووچ کے اس اعلان کے بعد سامنے آئی ہے کہ وہ یوکرین کی صدارت کو چیلنج کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اب وقت آگیا ہے کہ کریملن کے ساتھ جنگ کے خاتمے کے بارے میں بات چیت شروع کی جائے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ یوکرین میں رائے عامہ کے جائزوں نے اشارہ کیا ہے کہ روس کے خلاف لڑائی اور زیلنسکی کی حمایت میں کمی آئی ہے حالانکہ وہ اب بھی 60 فیصد سے اوپر ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں