اسرائیل کا لبنان میں حزب اللہ کے فوجی ٹھکانوں اور ملٹری کمپاؤنڈ پرحملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے منگل کو کہا کہ اسرائیل پر مارٹر گولہ باری کے جواب میں لبنان میں حزب اللہ کے فوجی ٹھکانوں، بنیادی ڈھانچے اور ایک فوجی کمپاؤنڈ پر اسرائیل نے حملہ کیا۔

اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں کہا، "لبنان سے اسرائیل کے لیے پیر کے روز حملوں کے جواب میں تھوڑی دیر قبل اسرائیلی فضائیہ کے لڑاکا طیاروں نے حزب اللہ کے حملوں کے مقامات، دہشت گردی کے بنیادی ڈھانچے اور ایک فوجی کمپاؤنڈ کو نشانہ بنایا۔"

بیان میں مزید کہا گیا ہے: "اس کے علاوہ لبنان سے شمالی اسرائیل میں زاریت کے علاقے تک ایک حملے کے جواب میں [اسرائیلی فوج] نے گولہ باری کے ذرائع کو نشانہ بنایا۔ مزید برآں خطرے کو دور کرنے کے لیے [اسرائیلی فوج] نے لبنانی سرزمین کے کچھ دوسرے مقامات پر حملہ کیا۔

ایک روز قبل اسرائیلی فوج نے کہا تھا کہ عرب الارمشے کے علاقے میں اسرائیلی فوجی چوکی پر مارٹر گولے داغنے کے جواب میں اسرائیلی فوجیوں نے کچھ دیر قبل لبنان کے علاقے میں حزب اللہ کی ہتھیاروں کے ذخیرے کی سہولت پر حملہ کیا۔

اسرائیلی فوج نے مزید کہا: "تل ہائی، کریات شیمونہ کی طرف متعدد حملوں اور شتولا کے علاقے میں آئی ڈی ایف کی ایک چوکی کی نشاندہی کی گئی۔ جواب میں [اسرائیلی فوج] نے لبنان میں گولہ باری کے ذرائع کو نشانہ بنایا۔ مزید برآں [اسرائیلی فوج] کے توپ خانے نے لبنانی حدود کے اندر متعدد مقامات کی طرف گولہ باری کی۔

حزب اللہ نے پیر کو اعلان کیا کہ اس نے لبنان-اسرائیل سرحد پر اسرائیلی چوکیوں پر حملے کیے۔ حزب اللہ کے ٹیلی ویژن چینل المنار کے مطابق ملیشیا نے کہا کہ اس کے مزاحمت کاروں نے اب تک سرحد پار 11 سرحدی چوکیوں کو نشانہ بنایا ہے اور اس بات کی تصدیق کی ہے کہ حملوں کے نتیجے میں براہِ راست حملے ہوئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں