’2024ء میں 20 گیگا واٹ کی صلاحیت کے قابل تجدید توانائی کے لیے ٹینڈرز طلب کر رہے ہیں‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے وزیر توانائی شہزادہ عبدالعزیز بن سلمان نے کہا ہے کہ NEOM گرین ہائیڈروجن پروجیکٹ نے 8.5 بلین ڈالر کی کل سرمایہ کاری کے ساتھ پہلا مرحلہ مکمل کرلیا ہے۔

سعودی گرین انیشیٹو کے تیسرے ایڈیشن کے آغاز کے دوران توانائی کے وزیر نے مزید کہا کہ ہندوستان اور یورپ کے درمیان اقتصادی راہداری منصوبہ بجلی اور گرین ہائیڈروجن برآمد کرنے کے مملکت کے عزائم کی حمایت کرتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ "ہم 2024 میں 20 گیگا واٹ کی صلاحیت کے ساتھ قابل تجدید توانائی کے لیے ٹینڈرز شروع کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں"۔

وزیر توانائی نے تصدیق کی کہ سعودی عرب اگلے سال 2024 میں جغرافیائی سروے کا منصوبہ شروع کرے گا۔

شہزادہ عبدالعزیز بن سلمان نے کہا کہ NEOM گرین ہائیڈروجن پراجیکٹ نے پہلا مرحلہ مکمل کر لیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ "ہم لاکھوں لوگوں کو کھانا پکانے کا صاف ایندھن فراہم کرنے کے لیے کئی افریقی ممالک کے ساتھ کام کر رہے ہیں"۔

کل سوموار کو سعودی گرین انیشیٹو فورم 2023 کے تیسرے ایڈیشن کی سرگرمیوں کا آغاز دبئی میں "COP28" کانفرنس کے موقعے پر کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں