ہم نے غزہ میں القسام بریگیڈز کے نصف رہنماؤں کو مار دیا: اسرائیلی حکومت

ریڈ کراس یرغمالیوں تک رسائی دلوائے، قیدی تبادلہ سے قبل پٹی میں ایک ماہ زمینی کارروائی کی ضرورت: اسرائیلی فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی حکومت کے ترجمان ایلون لیوی نے کہا ہے کہ اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی میں فوجی آپریشن کے آغاز سے لے کر اب تک کی پٹی میں حماس کی القسام بریگیڈز کے کم از کم نصف رہنماؤں کو مار ڈالا ہے۔

لیوی نے غیر ملکی صحافیوں کے لیے منعقد پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ آئی ڈی ایف نے اب تک حماس کی بریگیڈز کے نصف رہنماؤں کو مار دیا ہے۔ اسرائیلی افواج بڑی فضائی مدد کے ساتھ غزہ کی پٹی کے اندر پیش قدمی جاری رکھے ہوئے ہیں۔ اس مہم میں حماس کی عسکری صلاحیتوں میں پہلے ہی نمایاں کمی آگئی ہے۔

اس سے قبل بدھ کو اسرائیلی فوج نے ایک "فوری کال" بھیجی جس میں اس نے ریڈ کراس سے 7 اکتوبر سے حماس کے زیر حراست یرغمالیوں تک پہنچنے کے لیے مداخلت کرنے کا مطالبہ کردیا۔ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ہائی کمشنر وولکر ترک نے کہا کہ غزہ میں وحشیانہ جرائم کے ارتکاب کا بڑا خطرہ ہے۔ انہوں نے دونوں فریقوں پر زور دیا کہ وہ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے باز رہیں۔

وولکر ترک نے جنیوا میں صحافیوں کو بتایا میرے انسانی حقوق کے ساتھی اس صورتحال کو تباہ کن قرار دے رہے ہیں۔ ان حالات میں مظالم کا بڑا خطرہ موجود ہے۔ فریقین اور تمام ملکوں خاص طور پر اثر و رسوخ رکھنے والے ملکوں کو ایسے جرائم کو ہونے سے روکنے کے لیے فوری اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔

فوج کے ترجمان ڈینیئل ہگاری نے ایک بیان میں کہا کہ اسرائیلی فوج غزہ میں حماس کو ختم کرنے کے لیے اپنی کارروائیوں کو بڑھا رہی ہے۔ ہم یرغمالیوں کو گھر واپس لانے کے اپنے مشن سے دستبردار نہیں ہوئے۔

انہوں نے مزید کہاعالمی برادری کو کارروائی کرنی چاہیے۔ ریڈ کراس کو ان 138 قیدیوں تک پہنچنے کے قابل ہونا چاہیے جو حماس کے ہاتھ میں ہیں۔ حماس نے 7 اکتوبر کو اسرائیل کے جنوبی سرحدی قصبوں پر شروع کیے گئے اچانک حملے کے دوران 240 اسرائیلیوں کو یرغمال بنایا اور 1200 کے قریب اسرائیلیوں کو مار دیا تھا۔

حماس کے سرکاری میڈیا آفس کے اعداد و شمار کے مطابق اسرائیل نے 7 اکتوبر سے ہی غزہ کی پٹی پر بمباری شروع کردی تھی۔ اسرائیلی آپریشن میں 7100 بچوں سمیت 16250 سے زیادہ افراد جاں بحق ہوئ ہے۔۔ بدھ کے روز اسرائیلی آرمی ریڈیو نے کہا کہ ملٹری اسٹیبلشمنٹ میں اندازوں سے ظاہر ہوتا ہے کہ فوج کو غزہ کی پٹی میں ایک ماہ کی زمینی کارروائیوں کی ضرورت ہے۔ اس کے بعد حماس کے ساتھ قیدیوں کے تبادلے کی نئی بات چیت ہوسکتی ہے۔

اسرائیلی وزیر دفاع گیلانٹ نے کہا ہے کہ حماس غزہ کی پٹی پر کنٹرول کھو رہی ہے اور اسے بھاری نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے۔ یہ اسرائیلی فوج کے جنگجوؤں کی فیصلہ کن اور مضبوط کارروائیوں سے حاصل ہوا ہے۔ غزہ میں محکمہ صحت کے حکام نے بتایا کہ 7 اکتوبر سے اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں فلسطینیوں کی ہلاکتوں کی تعداد 16,250 سے تجاوز کر گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں