فلسطین اسرائیل تنازع

امدادی سامان غزہ پہنچانے کے لیے ایک اور راہداری کھلنے کا امکان : مارٹن گرفیتھس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اقوام متحدہ کے انسانی بنیادوں پر کام کرنے والے امدادی شعبے کے سربراہ مارٹن گرفیتھس نے کہا ہے کہ غزہ میں امدادی سرگرمیوں میں تیزی اور وسعت لانے کے لیے ایک اور راہداری کے جلد کھولے جانے کی امید پیدا ہو گئی ہے۔

مارٹن گرفیتھس نے جمعرات کے روز کرم شالوم راہداری کے حوالے سے بتائی ہے۔ وہ جنیوا میں اخباری رپورٹرز سے بات چیت کر رہے تھے۔

اقوام متحدہ کے امدادی سرگرمیوں کے سربراہ نے کہا ' ہم اس سلسلے میں اسرائیلی حکام کے ساتھ مذاکرات جاری رکھے ہوئے ہوئے ہیں۔' ایسی امید افزا علامتیں مو جود ہیں یہ راہداری بھی جلد کھل سکے گی۔

مارٹن گرفتھیس نے کہا ' اگر کرم شالوم راہداری کھول دی گئی توغزہ کی گنجان آباد مگر بمباری سے تباہ حال غزہ میں امدادی سامان کی ترسیل میں قدرے بہتری ہو جائے گی۔

انہوں نے کہا اگر کرم شالوم راہداری کھل گئی تو ایک معجزے سے کم نہ ہو گا۔ واضح رہے جنگ سے قبل اسرائیلی سرحد سے جڑی اس راہداری کے راستے غزہ کے لیے 60 فیصد سے زائد سامان کی کریم شالوم سے ہی ہوتی تھی۔

لیکن جنگ شروع ہونے سے اب تک یہ راہداری بند ہے۔ اس طرح ساری امدادی سرگرمیاں رفح راہداری پر منتقل ہو گئی ہیں۔ جس کے راستے غزہ کے لیے کافی امدادی سرگرمیاں ممکن نہیں ہو سکتیں کہ وہ ایک تنگ سی راہداری ہے۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ امکانی طور پر کرم شالوم نامی راہداری دونوں جنگی فریقوں کی رضا مندی کے باوجود بتدریج ہی کھل سکے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں