بغداد میں امریکی سفارت خانے کے قریب میزائل حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق کے دارالحکومت بغداد کے گرین زون میں واقع امریکی سفارت خانے میں ایک اور میزائل حملے کی اطلاعات ہیں۔

خیال رہے کہ سات اکتوبر کو اسرائیل پرحماس کے حملے کے بعد عراق میں ایران نواز گروپوں کی طرف سے امریکا اور اس کی قیادت میں اتحادی فوج کے مراکز پرمیزائل اور ڈرون حملوں کے واقعات پیش آچکے ہیں۔

خیال رہے کہ امریکا کی قیادت میں عالمی اتحادی افواج ’داعش‘ کے خلاف سرگرم ہے۔

آج جمعہ کو عراقی دارالحکومت بغداد کے وسط میں گرین زون کے اندر امریکی سفارت خانے کے قریب میزائل داغا گیا۔

سفارت خانے کے قریب میزائل حملہ

ایک سکیورٹی ذرائع نے انکشاف کیا کہ بغداد میں امریکی سفارت خانے کے اندر سائرن بجائے گئے تھے۔ سفارت خانے کے قرب وجوار میں صبح کے وقت میزائل داغے گئے تھے۔

ابتدائی معلومات کے مطابق متعدد میزائل سفارت خانے کے قریب گرے۔

یہ نیا حملہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب غزہ کی پٹی میں جنگ کے آغاز سے اب تک عراقی مسلح دھڑوں کی جانب سے شام اور عراق کے اندر امریکی افواج کے فوجی اڈوں پر کیے گئے حملوں کی تعداد 78 سے زیادہ ہو چکی ہے۔

غزہ جنگ میں امریکی حمایت

"عراق میں اسلامی مزاحمت" کے نام سے مشہور دھڑوں نے طویل عرصے سے امریکی افواج کو نشانہ بنانے والے زیادہ تر حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے اور کہا ہے کہ یہ اسرائیل کی غزہ جنگ میں امریکی حمایت کا رد عمل ہے۔

واشنگٹن اب تک 17 اکتوبر سے عراق اور شام میں اپنی افواج کے خلاف 78 حملوں کی تصدیق کرچکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں