مکہ روٹ سکیم کے ذریعے 5 برسوں میں 618000 عازمین حج کو خدمات پیش کی گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مکہ روٹ سکیم کے تحت تمام مسلم اکثریتی ملکوں میں حجاج کرام کو ایک اضافی سہولت دی گئی کہ ایک ہی چھت تلے ایئرپورٹس پر انھیں تین مختلف سہولیات پیش کی گئیں جن میں ویزا، کسٹم کلیرنس اور طبی معانے کی سہولت دی گئی۔ عازمین حج کے لیے اس سکیم کے متعارف کروانے کا مقصد انھیں زیادہ سے زیادہ سہولت دینا اور ان کا وقت بچانا تھا۔

سعودی خبر رساں ادارے 'ایس پی اے' نے رپورٹ کیا ہے یہ سہولت سکیم عازمین حج کی بڑھتی ہوئی تعداد کے پیش نظر بہت سود مند رہی۔ جس نے سفر اور اندراج کے پراسس کو آسان بنایا اور سعودی شراکت دار ملکوں کو سہولت ملی۔

خبر رساں ادارے 'ایس پی اے' نے بتایا کہ 6 لاکھ 18 ہزار عازمین حج کو یہ سہولت فراہم کی گئی۔ اس سہولت سے فائدہ اٹھانے والے عازمین کا تعلق 7 ممالک سے ہے جن میں مراکش، انڈونیشیا، ملائیشیا، پاکستان، بنگلہ دیش، ترکی اور آئیوری کوسٹ شامل ہیں۔

یہ سکیم 2019 میں مسلم اکثریتی ممالک میں شروع کی گئی۔ جس کے تحت ویزا، کسٹم کلیرنس اور طبی معائنے جیسے سہولیات عازمین کو ان کے ممالک کے ایئرپورٹس پر فراہم کی گئی تھیں۔ تاکہ ان کا وقت بچایا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں