مشرق وسطیٰ

وسطی اور جنوبی غزہ پر اسرائیلی بمباری میں مزید 11 فلسطینی شہید

تازہ کارروائی سکیورٹی کونسل میں امریکی ویٹو کے بعد کی گئی، مغربی کنارے میں بھی گرفتاریوں میں شدت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکہ کی جانب سے اقوام متحدہ میں فائر بندی کی قرارداد کو ویٹو کرنے کے چند گھنٹوں بعد اسرائیل کی غزہ میں تازہ ترین کارروائی کے دوران مزید 11 فلسطینیوں کی شہادت کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق غزہ کی وزارت صحت نے ہفتے کو بتایا کہ جنوبی شہر خان یونس پر اسرائیلی حملے میں چھ افراد شہید ہوئے جب کہ رفح میں ایک الگ حملے میں مزید پانچ دیگر فلسطینی جان سے گئے۔

غزہ کے وسیع علاقے ملبے کا ڈھیر بن چکے ہیں اور اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ تقریباً 80 فیصد آبادی بے گھر ہو چکی ہے جہاں خوراک، ایندھن، پانی اور ادویات کی شدید قلت ہے۔

اسرائیل کی ہفتے کی صبح کارروائی سے چند گھنٹوں قبل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی ایک قرارداد جس میں فوری جنگ بندی کا مطالبہ کیا گیا تھا، امریکہ نے ویٹو کر دیا تھا۔

سلامتی کونسل غزہ قتل عام میں ’شریک جرم‘

عالمی تنظیم ڈاکٹرز ودآؤٹ بارڈرز (ایم ایس ایف) نے کہا کہ سلامتی کونسل غزہ میں ’جاری قتل عام میں شریک جرم‘ ہے۔

اسرائیلی فوج نے جمعے کی شب کہا کہ اس نے 24 گھنٹوں کے دوران غزہ میں 450 اہداف کو نشانہ بنایا ہے۔

غزہ میں وزارت صحت نے بھی گذشتہ 24 گھنٹوں میں غزہ شہر کے قریب 40 اور جبالیہ اور مرکزی جنوبی شہر خان یونس میں درجنوں اموات کی اطلاع دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں