فلسطین اسرائیل تنازع

غزہ دُنیا میں بچوں کا سب سے بڑا قبرستان، غزہ شمال سے جنوب تک بمباری

انسانی حقوق گروپ کا غزہ میں جارحیت اور عالمی برادری کا دوہرا معیار ختم کرنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیل غزہ کی پٹی پر 65 ویں روز بھی شدید بمباری جاری رکھے ہوئے ہے۔ دوسری طرف انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم یورو-میڈیٹیرینین ہیومن رائٹس آبزرویٹری نے ہفتے کے روز کہا ہے کہ اسرائیل نے 7 اکتوبر سے غزہ میں 10,000 سے زیادہ بچوں جن میں شیر خوار بچے بھی شامل ہیں کو شہید کیا ہے جب کہ سیکڑوں کی تعداد میں بچوں کو بتاہ ہونے والی عمارتوں کے ملبے کے نیچے سے نکالا تک نہیں جا سکا ہے۔

23 ہزار سے زائد اموات

غزہ میں حماس کی وزارت صحت نے اعلان کیا تھا کہ ہلاکتوں کی تعداد 17,490 تک پہنچ گئی ہے، جن میں 7,870 بچے اور 6,121 خواتین شامل ہیں۔ ہیومن رائٹس آبزرویٹری نے اپنی ویب سائٹ پر شائع ہونے والے ایک بیان میں کہا ہے کہ شدید اسرائیلی فضائیہ اور توپ خانے میں ہلاکتوں کی کل تعداد غزہ کی پٹی پر ہونے والے حملوں میں 23,012 سے تجاوز کرگئے جن میں 9,077 بچے شامل ہیں۔

گروپ نے مزید کہا کہ "سیکڑوں بچے ملبے تلے دبے ہوئے ہیں جن کے زندہ رہنے کے امکانات کم ہوتے جا رہے ہیں۔ بعض بچے ہفتوں سے تباہ عمارتوں کے ملبے تلے ہیں۔ اس طرح غزہ جنگ میں مارے جانے والے بچوں کی تعداد دس ہزار سے تجاوز کرگئی ہے اور غزہ دنیا میں بچوں کا سب سے بڑا قبرستان بن چکا ہے۔

سات لاکھ بچے شہید، زخمی یا بے گھرہوئے

یورو-میڈیٹیرینین آبزرویٹری کے اندازے کے مطابق غزہ کی پٹی میں جاری اسرائیلی جارحیت میں غزہ کی پٹی میں اسرائیل کے حملوں کا نشانہ بننے والے بچوں کی کل تعداد تقریباً 700,000 تک پہنچ گئی ہے۔ ان میں شہید، زخمی اور بے گھر ہونے والے بچے شامل ہیں۔

انسانی حقوق گروپ نے نشاندہی کی کہ غزہ میں 18 لاکھ 40 ہزار افراد اندرونی طور پر بے گھر ہوچکے ہیں۔ وہ اپنے بچوں کے ساتھ ایسے مراکز میں مقیم ہیں جو پناہ گاہ کے لیے نامزد یا موزوں نہیں ہیں۔

"بچوں کا سب سے بڑا قبرستان"

یورو-میڈیٹیرینین مانیٹر نے بین الاقوامی برادری سے ایک بار پھر مطالبہ کیا کہ اسرائیل کی طرف سے غزہ کی پٹی کو دنیا بھر کی جدید تاریخ میں بچوں کے لیے سب سے بڑے قبرستان میں تبدیل کرنے سے روکنے کے لیے فوری اور موثر کارروائی کرے، ان کے لیے تحفظ فراہم کرے اورغزہ کے باشندوں کے خلاف صہیونی ریاست کے صریح دہرے معیارات کو ختم کرے۔

قتل عام کا سلسلہ جاری

فلسطین ٹی وی اور وزارت صحت نے ہفتے کے روز اطلاع دی کہ غزہ کی پٹی کے مختلف علاقوں میں اسرائیلی فوج کی بمباری میں مزید 170 سے زائد فلسطینی شہید اور سیکڑوں زخمی ہوگئے۔

فلسطین ٹی وی نے اطلاع دی ہے کہ جنوبی غزہ کی پٹی کے ناصر ہسپتال خان یونس میں متعدد گھروں پر اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں 62 افراد جاں بحق ہوئے۔

دوسری جانب فلسطینی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ غزہ کی پٹی کی مرکزی گورنری پر اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں شہدا الاقصی ہسپتال میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 71 لاشیں اور 160 زخمی لائے گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں