فلسطین اسرائیل تنازع

غزہ میں جاری انسانی المیے نے اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے 'اونروا ' کو بھی لپیٹ میں لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے ' اونروا' نے غزہ میں جاری انسانی المیے کو روکنے کی کوششوں میں اپنی بے بسی ظاہر کرتے ہوئے خود اپنے ہی ڈھے جانے کے خطرے سے خبر دار کر دیا ہے۔ ' اونروا ' فلسطینی پناہ گزینوں کے لیے کام کرنے والا ادارہ ہے۔

جسے اس وقت میں بیس لاکھ کے قریب بے گھر اور نقل مکانی کرنے والوں کو سنبھالنے کی ذمہ داری ادا کرنا ہے۔ لیکن بے بس ہے۔ کہ جوں جوں وقت آگے بڑھ رہا غزہ میں تباہی اور انسانی المیہ کا خطرہ بڑھتا جارہا ہے۔

اسرائیل اپنی عالمی سطح پر موجود امریکہ و برطانیہ کی اندھی مدد و حمایت کی مدد سے غزہ میں بمباری مسلسل جاری رکھے ہوئے ہے، فضاؤں سے بمباری اور زمین سے امریکی ساختہ مرکاوا ٹینکوں کی اندھی گولہ باری کا سلسہ جاری ہے۔

اس تباہی اور انسانی المیے میں آنے والے دنوں میں مزید تیزی اور شدت لانے کا عندیہ اسرائیلی آرمی چیف نے ہفتے کے روز اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں جنگ بندی قرار داد کے امریکہ کی جانب سے ویٹو کیے جانے کے بعد دیا ہے۔

ان حالات میں ' اونروا ' سربراہ فلپ لازرینی نے اتوار کے روز اپنی بے بسی کے بارے میں کہہ دیا ہے غزہ میں مکمل انسانی تباہی ہے۔ اس ماحول میں ' اونروا' بھی اپنے ڈھے جانے کے قریب ہے۔ تاہم انہوں نے اس بارے میں کسی تفصیل کا ذکر نہیں کیا ہے۔ صرف یہ کہا ہے کہ 'ادارہ تباہی کے کنارے پر کھڑا ہے۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں