قبرص میں اسرائیلیوں پر حملے کا ایرانی منصوبہ ناکام: اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی براڈکاسٹنگ کارپوریشن نے اتوار کے روز کہا ہے کہ قبرص میں مقیم اسرائیلیوں کے خلاف حملے کی منصوبہ بندی کے الزام میں دو ایرانیوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ کمیشن کے مطابق دونوں کا تعلق ایرانی انقلابی محافظوں سے ہوسکتا ہے۔

کمیشن نے اخبار"کاتھیمیرینی قبرص" کے حوالے سے بتایا ہے کہ وہ قبرص میں مُمکنہ اسرائیلی اہداف کے بارے میں انٹلیجنس معلومات اکٹھا کرنے کے ابتدائی مرحلے میں تھے۔

وزیر اعظم کے دفتر برائے موساد انٹلیجنس اور قومی سلامتی کی صدارت کے نام پر ایک بیان جاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ "قبرص کی سلامتی اور ایگزیکٹو سروسز، انٹلیجنس ایرانی دہشت گردی کے ایک انفراسٹرکچر کو ناکام بنانے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ "انسداد دہشت گردی کی سرگرمی اور قبرص میں سکیورٹی خدمات کے ذریعہ سیل کی گرفتاری کی بہ دولت بہت سی معلومات ، کام کے طریقوں ، حملے کے اہداف اور ایرانی منصوبہ بندی کا پتہ چلایا جا سکے۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ "ہفتہ 7 اکتوبرکو حماس کے ذریعہ ہونے والے مہلک حملے کے بعد سے ایرانی حکومت نے دنیا بھرمیں سرگرمیوں کو بڑھانے کی کوششیں بڑھا دی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ "موساد ، انٹلیجنس اینڈ سکیورٹی خدمات میں اپنے شراکت داروں کے تعاون سے ایران اور اس کے اتحادیوں سے سکیورٹی کے خطرات کو ختم کرنے ، اسرائیل اور اس کے شہریوں کی حفاظت کے لیے مختلف طریقوں سے کام جاری رکھے ہوئے ہے۔

قومی سلامتی کے ہیڈ کوارٹر نے بتایا کہ جنگ کے پھیلنے کے بعد سے بہت سے اسرائیلی قبرص میں منتقل ہوگئے ہیں۔

پچھلے ہفتے اسرائیل نے مغربی یورپ اور جنوبی امریکا سمیت دنیا کے بہت سے ممالک کے سفر کے بارے میں انتباہی اپ ڈیٹ جاری کیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں