فلسطین اسرائیل تنازع

حماس رہ نما کےگھر سے7 اکتوبر کے حملے کا منصوبہ ملا ہے: اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے منگل کے روز دعویٰ کیا ہے کہ اس کے فوجیوں کو شمالی غزہ میں جبالیا میں حماس رہ نما کے گھر میں موجود ایک کمپیوٹر سے 7 اکتوبر کو اسرائیل پر کیے گئے حملے کا منصوبہ ملا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اس گھر کو حماس تحریک کے ہیڈ کوارٹر کے طور پر بھی استعمال کیا جاتا تھا۔ حماس کے لیپ ٹاپ کے علاوہ دشمنی سے متعلق دستاویزات بھی ملی ہیں، جن میں 7 اکتوبر کو غزہ کی پٹی سے اسرائیل پر حملے کی منصوبہ بندی کی گئی تھی۔

فوجی تنصیبات اور گودام

انہوں نے مزید کہا کہ جبالیا میں لڑائیوں کے دوران ایک رہائشی علاقے اور ایک اسکول کے قریب اسرائیلی فوجیوں نے حماس کے زیر استعمال فوجی تنصیبات اور ہتھیاروں کے ڈپو دریافت کیے۔

ٹاس نیوز ایجنسی کے مطابق انہوں نے نشاندہی کی کہ گوداموں میں میزائل، مختلف قسم کے اینٹی ٹینک گرینیڈ لانچر، دھماکہ خیز آلات، ہینڈ گرنیڈ اور مشین گنیں موجود تھیں۔

اسرائیلی فوج نے جبالیا میں گھس کر غزہ کے مشرق میں واقع شجاعیہ محلے پر بمباری کی
اسرائیلی فوج نے جبالیا میں گھس کر غزہ کے مشرق میں واقع شجاعیہ محلے پر بمباری کی

قابل ذکر ہے کہ اسرائیل نے 7 اکتوبر کو حماس کے ایک غیر معمولی حملے کے جواب میں غزہ پر تباہ کن بمباری شروع کر دی تھی اور غزہ کا مکمل محاصرہ کر دیا تھا۔حماس کے حملے میں کل 12 اسرائیلی ہلاک ہوئے مگر اسرائیلی بمباری میں 18 سے زائد فلسطینی شہید اور پچاس ہزارسے زاید زخمی ہوچکے ہیں۔ شہداء اور زخمیوں میں 70 فی صد بچے اورعورتیں ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں