فلسطین اسرائیل تنازع

ہم غزہ میں فوری جنگ بندی کا مطالبہ کرتے رہیں گے: سعودی عرب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے کل منگل کو زور دے کر کہا ہے کہ مملکت غزہ میں فوری جنگ بندی کا مطالبہ کرتی رہے گی تاکہ ایک منصفانہ اور پائیدار امن کے لیے قابل اعتماد راستے کی تشکیل پر زور دیا جائے گا۔

انہوں نے انسانی حقوق کونسل کے اجلاس جنیوا میں منعقدہ اجلاس سے خطاب میں کہا کہ مملکت غزہ میں جاری مصائب کو مسترد کرتی ہے اور فوری جنگ بندی کی حمایت کرتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ غزہ کی پٹی کی تلخ حقیقت بین الاقوامی سلامتی اور اقوام متحدہ کے اداروں کی ساکھ کو متاثر کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ ہم اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق نے فوری جنگ بندی کے مطالبے کی حمایت اور اسرائیل کی جانب سے غزہ کے جنگ زدہ لوگوں کو خوراک اور ادویات کی فراہمی یقینی بنانے کی ضرورت پر زور دیا۔

اسرائیلی بمباری سے غزہ میں ہونے والی تباہی کا مںظر
اسرائیلی بمباری سے غزہ میں ہونے والی تباہی کا مںظر

فیصل بن فرحان نے فلسطینیوں کو ان کا حق خودارادیت اور باوقار زندگی کا حق دینے کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ فلسطین کے حالات بین الاقوامی انسانی قانون کی واضح خلاف ورزیوں اور جنیوا کنونشنز کی خلاف ورزیوں کا کھلا ثبوت ہیں۔ مملکت اسرائیل کی جانب سے فلسطینیوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کی مذمت کرتے ہوئے اسرائیل کو کٹہرے میں لانے کا مطالبہ کرتی ہے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب کے وزیر خاجہ شہزادہ فیصل بن فرحان گذشتہ روز اعلیٰ سطحی اجلاس کی قیادت کرتے ہوئے جنیوا پہنچے تھے جہاں انہوں نے نسانی حقوق کے عالمی اعلامیہ کی 75 ویں سالگرہ منانے کے لیے منعقدہ اجلاس میں شرکت کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں