اسرائیل نے الشفاء ہسپتال پر بمباری کر کے اسے خون سے غسل دیا : ڈبلیو ایچ او

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عالمی ادارہ صحت نے غزہ کے سب سے بڑی علاج گاہ 'الشفاء ہسپتال پراسرائیلی بمباری سے ہونے والی تباہی کو ہسپتال کو خون سے نہلا دینا قرار دیا ہے۔ اس لیے اب اس کی بچاؤ اور بحالی کے لیے اقدامات کی ضرورت ہے۔ عالمی ادارہ صحت نے یہ بات یہ اتوار کے روز کہی ہے۔

عالمی ادارہ صحت اور اقوام متحدہ کی ایک ٹیم نے الشفاء کو ادویات اور دوسری طبی امداد کی فراہمی ممکن بنائی ہے۔

اس موقع پر عالمی ادارے کی ٹیم نے لاکھوں بے گھر اور نقل مکانی کا شکار ہونے والے فلسطینی عوام کے اس ہسپتال سے رجوع کرنے کا ذکر کرتے ہوئے کہا، اس کے احاطے اور آس پاس میں چونکہ لوگ پناہ کے لیے بہت بڑی تعداد میں موجود ہیں۔ اس لیے اس ہسپتال کے ساتھ پناہ لینے والوں کو پانی اور خوراک کی بھی اشد اور بہت زیادہ ضرورت ہے۔

جب اس ٹیم نے الشفاء ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ کا وزٹ کیا تو اس کی بمباری اور اسرائیلی فوج کے حملوں سے بننے والی حالت کو سیدھے سیدھے خونی غسل کا نام دیا ، جس سے اسرائیلی فوج نے اس ہسپتال اور اس میں موجود فلسطینیوں کو گذارا ہے۔

ڈبلیو ایچ او کی ٹیم کے مطابق سینکڑوں زخمیوں کے ساتھ مریض اس ہسپتال میں اس کے باوجود آج بھی موجود ہیں، ہر آنے والے لمحے میں نئے نئے زخمی اور مریض آرہے ہیں۔

انتہائی زخمی فلسطینی جو ' ٹراما ' کا بھی شکار ہیں اور انتہائی بری حالات میں ہیں ہسپتال میں فرش پر پڑے ہیں۔ درد سے کراہ رہے ہیں کہ انہیں درد سے نجات دلانے کے لیے نہ ہسپتال میں درد کش ادویات ہیں اور انجیکشن دستیاب ہیں۔

اگرچہ ہسپتال میں سینکڑوں زخمی اور مریض موجود ہیں مگر ہسپتال بہت محدود سٹاف کے ساتھ اور نہ ہونے کے برابر وسائل کے ساتھ بہت ہی کم کارکردگی دکھا پارہا ہے، اس لیے نازک حالت کے قریب زخمیوں اور مریضوں کو اہلی عرب ہسپتال میں منتقل کر دیا جاتا ہے۔ جہاں سرجری کی کچھ سہولیات موجود ہیں ۔

عالمی ادارہ صحت کی ٹیم کے مطابق الشفاء ہسپتال میں آپریشن تھیٹرز زیر استعمال آنے کی حالت میں ہیں، نہ ہسپتال میں آکسیجن سلنڈرزکی دستیابی ہے، ہسپتال میں یومیہ بنیادوں پر صرف 30 مریضوں کو ڈائیلیسس کی سہولت فراہم کی جا سکتی ہے۔

چونکہ بمباری کی وجہ سے ہسپتال کے اندر کا زیادہ تر طبی ڈھانچہ اور نظام تباہ ہو چکا ہے۔ عالمی ادارے کا کہنا ہے کہ آنے والے دنوں میں الشفاء ہسپتال کو تھوڑی بہت طبی سہولیات نئے سرے سے دینے سکنے کے قابل بنانے کی ضرورت ہے۔

اسرائیلی بمباری اور جنگ سے پہلے یہ ہسپتال 24 گھنٹے کھلا ہوتا تھا اور مریضوں کو علاج کی سہولیات دیتا تھا۔ یہ غزہ کا سب سے بڑا ہسپتال تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں