فلسطین اسرائیل تنازع

اسرائیل جنگ کو منطقی انجام تک پہنچا کر چھوڑے گا: نیتن یاہو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو نے کہا ہے' اسرائیل آخر تک جنگ لڑے گا۔ ہم حماس کے حوالے سے اپنے تمام اہداف حاصل کریں گے بشمول یرغمالیوں کی رہائی کے۔'

اسرائیل نے اتوار کے روز بھی اپنی جنگی مہم کو آگے بڑھاتے ہوئے مزید فلسطینی ہلاک کیے ہیں۔ یہ سلسلہ تین سفید جھنڈے تھامے مار دیے گئے یرغمالیوں کے بعد بھی جاری ہے۔

دس ہفتے سے جاری اس جنگ کے دوران اسرائیل کو بے مثال قتل و غارت گری اور گھروں کو تباہ کر کے لاکھوں فلسطینیوں کو بے گھر کرنے کا موقع ملا ہے۔

اب 14 دسمبر سے مواصلاتی رابطے بھی منقطع کر دیے گئے ہیں ۔اسرائیل امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن کی اسرائیل آمد سے پہلے تک اپنا یہ دباؤ مزید بڑھائے گا۔ کیونکہ امریکہ کی طرف سے بھی اب جنگ کے بارے بے چینی بتائی جا رہی ہے کہ جنگ روکی جائے۔

امریکہ نے اٹھارہ انیس ہزار فلسطینیوں کے مرنے اور 19 لاکھ کے بے گھر تک اسرائیل کا مکمل ساتھ دیا لیکن امریکہ شہریوں کی بڑھتی ہوئی ہلاکتوں کا احساس کرنے لگ گیا ہے ۔ اسرائیل نے دس ہفتوں کے دوران غزہ کی پٹی پر بمباری کر کے مکانات کو تقریباً صاف کر دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں