فلسطین اسرائیل تنازع

اسرائیلی صدر ہرتصوغ نے حماس کے ساتھ جنگ میں ایک اور وقفے کا عندیہ دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل کے صدر إسحاق ہررتصوغ نے حماس کے ساتھ ایک اور جنگ بندی پر اسرائیلی آمادگی کا اشارہ دیا ہے۔ انہوں اس امر کا اظہار منگل کے روز کیا ہے۔ وہ سفیروں کے ایک اجتماع سے گفتگو کر رہے تھے۔

ان کا کہنا تھا اسرائیل یرغمالیوں کی رہائی کے لیے بیرونی ثالثوں کے ذریعے ایک جنگ بندی کی طرف جا رہا ہے۔ اس صورت میں فلسطینیوں کے لیےغزہ کے اندر مزید امدادی سامان کی رسائی بھی آسان ہو سکے گی۔

اسرائیلی صدر کی طرف سے یہ آمادگی کا یہ اشارہ ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب اسرائیل کے اندر یرغمالیوں کی رہائی کے لیے عوامی دباؤ بڑھا ہوا ہے۔ مگر اسرائیلی حکومت جنگ بندی کے لیے بظاہر تیار نہیں بلکہ اسے منطقی انجام تک پہنچانے کے لیے کوشاں ہے۔

تاہم صدر نے ساتھ ہی ساتھ یہ بھی کہا ہے اس سلسلے میں ذمہ داری کلی طور پر حماس کے رہنما یحیٰ سنوار اور دوسروں پر ہوگی کہ وہ کیسا رویہ اختیار کرتے ہیں۔

صدر ہرتصوغ کا کہنا تھا اسرائیل انسانی بنیادوں پر ایک اور جنگی وقفے کے لیے تیار ہے تاکہ ہم اپنے یرغمالیوں کو رہا کرا سکیں۔ اسرائیل میں صدر کا حکومت میں کردار محض رسمی نوعیت کا ہے۔

صدر کے اس عندیے کے بارے میں نیتن یاہو حکومت کی طرف سے فوری طور پر کوئی تائیدی یا تردیدی بیان سامنے نہیں آیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں