فلسطین اسرائیل تنازع

گولہ داغتے ہوئے ٹینک کے سامنے کھڑی اسرائیلی فوجی اہلکار کو نظرانداز کرنے کی تحقیقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

غزہ کی پٹی پراسرائیل کی جنگ شروع ہونےکے بعد قابض فوج کی جنگی حماقتوں کے نت نئے مظاہر سامنے آ رہے ہیں۔

چند روز قبل غزہ میں اپنے ہی تین یرغمالیوں کو گولیاں مارکرقتل کرنے کے بعد اسرائیلی فوج کو جس سبکی کا سامنا کرنا پڑا ہے اس میں ایک تازہ واقعے نے مزید اضافہ کردیا ہے۔۔

مہلک اسرائیلی فوج کے "غلطیوں"میں ایک نیا واقعہ شامل کیا گیا ہے۔ واقعہ یہ ہے کہ اسرائیلی فوجیوں نے ایک جگہ پر ٹینک سے گولہ داغا مگر ٹینک کے سامنے کھڑی ایک فوجی اہلکار کو یکسرنظرانداز کردیا گیا۔

اس واقعے کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے جس میں دکھایا گیا ہے کہ کس طرح ٹینک سے نکلنے والا گولہ خاتون اہلکار کے سر کے اوپر سے گذر گیااور وہ خوف زدہ ہو کر بھاگ کھڑی ہوئی۔

دوسری طرف اسرائیلی فوج نے اس واقعے کی انکوائری کا فیصلہ کیا ہے۔

اسرائیلی چینل 14 کےمطابق حکام نے اس واقعے کو فوج کی صریح خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے اس کی تحقیقات کا اعلان کیا ہے۔

انہوں نے زور دے کر کہا کہ وہ ابتدائی وقت میں ان کی گہرائی سے تحقیقات کریں گے اور لا پرواہی کا مظاہرہ کرنے والے اہلکاروں کو سزا دی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں