غزہ میں کوئی جگہ محفوظ نہیں،اسرائیل کے انخلاء کے حکم کے بعد اقوام متحدہ کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل کی طرف سے غزہ سےفلسطینیوں کو انخلاء کے لیے دیےجانے والے نئے حکم کے بعد اقوام متحدہ کے پناہ گزین کے لیے قائم ادارے نے کہا ہے غزہ میں اب کوئی بھی جگہ محفوظ نہیں رہی ہے۔ اسرائیلی فوج کی طرف سے جبری انخلا ء کا حکم جمعہ کے روز سامنے آیا تھا۔ حکم دیا گیا تھا کہ غزہ میں بے گھر کیے گئے فلسطینی البریج پناہ گزین کیمپ اور اس کے اردگرد کو خالی کرکے دیر البلح سے آگے مزید جنوب کی طرف نقل مکانی کر جائیں اس میں ان کے محفوظ رہنے کا امکان ہے۔

تھامس وائٹ نے سوشل میڈیا پر اس پر رد عمل میں کہا ہے کہ پچھلے ہفتوں میں غزہ میں رہنے والے فلسطینی بارہا نقل مکانی کرچکے ہیں۔ انہیں مہرے سمجھ کر اس طرح کے احکامات جاری نہ کیے جائے۔

اسرائیلی فوج فلسطنیوں کو جہاں نقل مکانی کرنے کا کہتی ہے ان کے اس جگہ پہنچنے پر وہی بمباری کردیتی ہے۔ اب غزہ میں کوئی جگہ محفوظ نہیں ہے اور نہ ہی رہنے کے لیے خالی ہے۔

نقل مکانی کے حکم کے بعد ہزاروں فلسطینیوں نے جمعے کے روز جنوب کے رخ کی جانب نقل مکانی شروع کردی ہے۔ انروا کے مطابق اسرائیل کے اس نئے حکم کی وجہ سے تقریبا ڈیڑھ لاکھ فلسطینیوں کو ایک مرتبہ پھر نقل مکانی کرنا پڑ رہی ہے۔ اب تک کے اندازے کے مطابق 19 لاکھ فلسطینی نقل مکانی کرنے پر مجبور ہوچکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں