مشرق وسطیٰ

اسرائیل کا حماس کے ملٹری پروڈکشن کے سینئر عہدیدار کو ٹھکانے لگانے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے حماس کے عسکری ونگ کے "تجارت، سپلائی اور ملٹری پروڈکشن" کے عہدیدار کو قتل کرنے کا دعوی کیا ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان اویچائی ادرائی نے "ایکس" پر بتایا کہ فوج اور جنرل سکیورٹی سروس نے حسن العطرش کو جنگی طیارے سے نشانہ بنایا۔ اس پر غزہ کی پٹی میں ہتھیاروں کی سمگلنگ میں ملوث ہونے کا الزام ہے۔

ادرائی نے مزید کہا کہ العطرش حال ہی میں مغربی کنارے میں ہتھیاروں اور گولہ بارود کی سمگلنگ میں بھی ملوث رہا ہے۔ قبل ازیں اسرائیلی فوج کے ترجمان نے حماس کے غزہ بریگیڈز کے 4 رہنماؤں کو ہلاک کرنے کا اعلان کیا اور ان کے نام اور تصاویر بھی پیش کیں۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان نے ’’ ایکس‘‘ پر کہا کہ سات سینئر بریگیڈز کمانڈرز میں سے چار کو اب تک ختم کر دیا گیا ہے۔ چین آف کمانڈ میں صرف تین سینئر کمانڈر باقی رہ گئے ہیں۔ ان میں سے ایک بریگیڈ کمانڈر اور دو بٹالین کمانڈر ہیں۔

اسرائیل غزہ کی پٹی میں حماس کے خلاف اپنی فوجی کارروائی جاری رکھے ہوئے ہے۔ بدھ کے روز اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو نے حماس کے خاتمے سمیت اپنے اہداف حاصل کرنے سے پہلے پٹی میں جنگ بندی کو مسترد کر دیا تھا۔

غزہ کی پٹی میں وزارت صحت نے ہفتے کے روز اعلان کیا کہ سات اکتوبر کو حماس اور اسرائیل کے درمیان جنگ کے آغاز کے بعد سے غزہ کی پٹی میں 20,258 فلسطینی شہید ہو گئے ہیں۔ 53688 فلسطینی زخمی ہیں۔

اسرائیل نے غزہ کی پٹی میں بڑی تباہی کی ہے۔ غزہ کی 23 لاکھ میں سے 19 لاکھ آبادی بے گھر ہو گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں