ایران اسرائیل پر سائبرحملے کے لیے کیا کررہا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام میں ایرانی پاسداران انقلاب کے ایک بریگیڈیئر جنرل راضی موسوی کے قتل کا جواب دینے کی ایرانی دھمکیوں کے بعد اسرائیل میں سائبر سکیورٹی ڈائریکٹوریٹ نے اطلاع دی ہے کہ ایران نے سائبر حملے کی کوششیں تیز کردی ہیں۔

’ٹائمز آف اسرائیل‘ کے مطابق ڈائریکٹوریٹ نے ایک نئے ایرانی سائبر حملے کا انکشاف کیا ہے جو اسرائیلی تنظیموں کو نقصان دہ سافٹ ویئر ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے تیار کیا گیا ہے۔ یہ سافٹ ویئر معلومات کو چوری اور حذف کر دیتا ہے۔

ای میل اور سکیورٹی اپ ڈیٹ

اسرائیلی سکیورٹی ڈائریکٹوریٹ نے ایک انتباہ میں کہا کہ فشنگ حملے سائبر سکیورٹی کمپنی F5 کی جانب سے ایک اہم سکیورٹی اپ ڈیٹ کی طرح دیکھنے کے لیے ڈیزائن کردہ ای میل بھیج کر کیے جاتے ہیں۔

ای میل میں ایک لنک ہے جو سافٹ ویئر اپ ڈیٹ کی طرح نظر آنے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے۔اسے ڈاؤن لوڈ کرنے پرآپ کے کمپیوٹر پر میلویئر انسٹال ہو جائے گا۔

اس نے بتایا کہ میلویئر پھر ڈیٹا چوری کرے گا اور اسے کمپیوٹر سے حذف کر دے گا۔

سیدرضی موسوی
سیدرضی موسوی

موسوی کے قتل کا ردعمل

ایران نے اسرائیل پر قدس فورس کے ایک اعلیٰ فوجی اہلکار سید راضی موسوی کو ایرانی سفارت خانے سے واپسی کے بعد شام کے دارالحکومت دمشق میں ان کےگھر پر میزائل سے حملے میں انہیں قتل کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔ ایران نے دھمکی دی ہے کہ وہ اس حملے کا جواب دے گا اور اس قتل کا بدلہ جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں