اسرائیلی فوج نے لبنان سے آنے والا ڈرون مار گرایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج کے ایک ترجمان نے جمعرات کے روز لبنان سے اسرائیل کی طرف چھوڑے گئے ڈرون کو روکنے اور اسے مار گرانے کا اعلان کیا۔

العربیہ اور الحدث چینلز کے نامہ نگار کے مطابق اسرائیلی فوج نے جنوبی لبنان میں کئی مقامات پر بمباری کی۔

اسرائیلی فوج نے ملک کے شمال میں سائرن بجنے کی اطلاع دی۔ اس سے قبل لبنان کے ساتھ سرحد پرباہمی گولہ باری کی اطلاعات آئی تھیں۔

لبنان میں حزب اللہ اور فلسطینی دھڑوں نے 8 اکتوبر سے اسرائیلی فوج کے ساتھ وقفے وقفے سے روزانہ کی بنیاد پر بمباری کا سلسلہ شروع کیا جس کے نتیجے میں سرحد کے دونوں جانب درجنوں افراد ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔

اسرائیلی چیف آف اسٹاف ہرزی ہیلیوی نے بدھ کی شام اس بات کی تصدیق کی تھی کہ شمالی محاذ حزب اللہ کے ساتھ فوجی تصادم جاری رکھنے کے لیے مختلف منصوبوں پر عمل درآمد کے لیے تیار ہے۔

اسرائیلی فوج کی سرکاری ویب سائٹ پر شائع ہونے والے ایک بیان کے مطابق آرمی چیف نے یہ بات لبنان کی سرحد پر سکیورٹی کی صورت حال کے حوالے سے ہونے والے جائزہ اجلاس کے دوران کہی۔ اس موقعے پر شمالی کمان کے کمانڈر میجر جنرل اوری گورڈین اور دیگرعسکری لیڈروں نے آرمی چیف کو تازہ صورت حال کے بارے میں بریفنگ دی۔

ہیلیوی نے کہا کہ "ہمارا پہلا شہریوں کا تحفظ اور امن بحال کرنا ہے تاہم اس میں وقت لگے گا۔ ان کا اشارہ شمالی اسرائیل کے تقریباً 60,000 آباد کاروں کی طرف تھا جو لبنانی حزب اللہ کے حملوں کی زد میں رہتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں