عرب شعراء میں شامل سعودی عرب کی ابھرتی شاعرہ سکینہ شریف سے ملیے

خوبصورتی ایک قابل تجدید توانائی ہے: سعودی شاعرہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کی نوجوان شاعرہ اورادیبہ سکینہ شریف کا شمارنہ صرف مملکت کے نامور شعرائے کرام میں ہونے لگا ہے بلکہ ان کے شعری مجموعے ’عرب شاعری کے دیوان‘ کا حصہ بننے کے بعد انہیں دیگرعرب دنیا میں بھی غیرمعمولی پذیرائی حاصل ہوئی ہے۔

وہ عمدہ فن اور فصیح شاعری کےمیدان میں شہرت حاصل کررہی ہیں۔ انہوں نے شاعری اور فن کی تاریخ پر قابل ذکر نشان چھوڑے۔ ان کی نظمیں دوسروں کی روحوں کے لیے ایک ٹرانزٹ کارڈ ہیں۔ اس کی روح ہراس چیز کی طرف مائل ہے جو فکر کے فیوز اور جمالیاتی ذوق کو بلند کرتی ہے۔

سعودی شاعرہ سکینہ الشریف نے پہلی سعودی شاعرہ کے طور پر اپنا ممتاز مقام بنایا جس کی بہ دولت آج سوانح حیات اور نظمیں انسائیکلو پیڈیا آف عربی شاعری "الدیوان" میں درج کی گئی تھیں۔

سعودی شاعرہ سکینہ شریف نے ’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کو دیے گئے انٹرویومیں کہا کہ "فن ٹکڑوں میں نہیں آتا، کیونکہ یہ ہمارے اندر تجریدی خصوصیات کے ساتھ ایک واحد ماس کے طور پر پیدا ہوتا ہے۔ میں نے اس سے لطف اٹھایا کیونکہ میں تشکیل کا شوق اور ہر طرح سے رنگوں کو بھڑکانے اور الفاظ کی تشکیل کے فن سے محبت کے ساتھ پیدا ہوئی‘‘۔

انہوں نے زور دیا کہ خوبصورتی ایک قابل تجدید توانائی ہے جو فنکاروں، مداحوں اور نقادوں کے درمیان گردش کرتی ہے۔ یہ انسان اور روح کو بلند کرتی ہے، ہماری پریشانیوں اور غموں کو دور کرتی ہے، حیرت انگیز، حیران کن اور بعض اوقات خوشی کے انداز میں ہمارے راستوں سےاٹھکیلیاں کرتی ہے‘‘۔

شاعری سے تعلق

سکینہ شریف نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ میں نظموں میں دیکھتی ہوں خواہ وہ قارئین کے سامنے کسی بھی شکل میں ہوںم خواہ عمودی، نثری، یا آزاد نظمیں ہوں۔ وہ دوسروں کی روحوں میں جانے کے لیے شاعر کا ایک ٹرانزٹ کارڈ ہیں۔ یہ اس وقت تک ممکن نہیں ہوگا۔ جب تک وہ اس میں نشر نہ کرے انہیں اس کی خواہشات، امیدیں اور درد سب کچھ اس میں محسوس کرتے ہیں۔

اس لیے میری روح ہراس علامت کی طرف متوجہ ہوتی ہے جو فکرکے شعلے کو بھڑکاتی ہے اور جمالیاتی ذوق کو اس کی بلند ترین سطحوں تک پہنچاتی ہے۔ شاعری میں فن کی طرح مکتب ہوتے ہیں، جن میں سب سے بہترین وہ ہے جو اسرار میں ملبوس ہو اور قاری کو مسحور کرنے کےبجائےاس کے رازوں کو دریافت کرنے میں مدد دے۔

عرب شعری دیوان میں نام کی شمولیت

عرب شعری دیوان میں شمولیت سے متعلق سوال کے جواب میں سکینہ شریف نے کہا کہ کاش یہ سوال میں نے خود انسائیکلو پیڈیا کی انتظامیہ سے کیا ہوتا لیکن میں آپ سے یہ بات نہیں چھپاؤں گی کہ میں اس انسائیکلوپیڈیا میں شمولیت سے پہلے واقف خود بھی آگاہ نہیں تھی۔

یہ واقعی میرے لیے اور بہت سے شاعروں کے لیے ایک بہت بڑا ادبی حوالہ تھا۔ اس کے بعد مجھے معلوم ہوا کہ مجھے شاعری کی بہ دولت جدید دور کے شاعروں میں شمار کیا گیا ہے۔ اتنا بڑا اعزاز حاصل کرنے کے لیے شاعر کے لیے کشش کا ایک اہم عنصر ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں