سعودی فیشن ڈیزائنر ریم جس کے ڈیزائن کردہ ملبوسات روایت اور جدت کا منفرد اظہار ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی فیشن ڈیزائنر ریم العسیلان نے اپنے فیشن ڈیزائن میں نہ صرف روایت اور جدت کا ملاپ کیا ہے بلکہ تنوع کی خصوصیات کے حامل معاشرے سعودی عرب کی پرانی فیشن روایت کو بھی زندہ کیا ہے۔

ریم نے سعودی عرب میں روایتی پہناووں کو منفرد انداز میں پیش کیا اور معمولی تبدیلیوں کے ساتھ اس نے فیشن کا ایک نیا انداز اپنایا جسے عوامی حلقوں بالخصوص خواتین میں غیرمعمولی پذیرائی حاصل ہوئی ہے۔

سوشل میڈیا پر صارفین کی بڑی تعداد ریم العسیلان کے ملبوسات کے ڈیزائن کو پسند کرتی ہے۔ صارفین کا کہنا ہے کہ ریم کے ڈیزائنز سے سعودی عرب میں پچھلی نسلوں اور آباؤ اجداد کے دور کی جھلک دکھتی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے العسیلان نے کہا کہ "مجھے طنطورہ میں موسم سرما میں شرکت کرنے کا اعزاز حاصل ہوا اور میں نے 18 مختلف ڈیزائن پیش کیے، جن میں خواتین اور مردوں سے لے کر مہمانوں کے استقبال، رقص کرنے والوں، اداکاروں، میزبانوں، بچوں، کلینر، ڈیلیوری ورکرز، انٹرایکٹو ڈراموں کے لیے ملبوسات اور روایتی ملبوسات پیش کیے۔

اس کے علاوہ العلا گورنری کے روایتی ملبوسات کے حوالے سے ایک مطالعےمیں دی گئی معلومات، آثار قدیمہ، جغرافیائی نوشتہ جات،اس کے رسوم و رواج، روایات، ڈائری اور رقص کے بارے میں معلومات کے بعد فیشن ڈیزائن کیے۔

الوسیلان کے روایتی ڈیزائنوں سے
الوسیلان کے روایتی ڈیزائنوں سے

العسیلان نے مزید کہا کہ "میں العلا علاقے کی فطرت کے رنگوں، مٹی اور پہاڑوں سے متاثر ہوئی، اس کے علاوہ پہاڑی پتھروں میں پائے جانے والے سرخ رنگ، انڈگو رنگ اور کچھ تاریخی نوشتہ جات سے متاثر ہو کرمیں نے العلا کے فیشن کی ساخت میں مدد لی۔

اس نے کہا کہ "فیشن میں میرا کیریئر 20 سال پر محیط ہے اور شروعات بس شوق تھا۔ پھر مذہبی مواقع کے علاوہ مجھے بین الاقوامی فیشن لائنز اور موسمی رنگوں میں دلچسپی تھی، جہاں میں نے خود کو روایتی فیشن میں زیادہ متوجہ پایا۔ روایتی فیشن ایک خاص روح رکھتا ہے، محبت، صبر اور قدیم یادوں سے بھرا ہوا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں