فلسطین اسرائیل تنازع

حماس کے اعلیٰ عہدے دار کا قتل اسرائیلی قبضے کے خلاف فلسطینی مزاحمت تیز کرے گا:ایران

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران نے لبنان میں فلسطینی مزاحمتی تحریک حماس کے اعلیٰ رہنما صالح العاروری کے اسرائیلی ڈروں حملے میں جاں بحق ہونے پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ اس کے نتیجے میں اسرائیل کے خلاف فلسطینی مزاحمت مزید بھڑکے اور تیز ہوگی۔

ایران کے سرکاری میڈیا کے مطابق ایرانی ترجمان ناصر کنعانی نے کہا ' شہدا کا خون بلا شبہ مزاحمت کی رگوں میں شامل ہو کر مزاحمتی شعلوں کو مزید بھڑکاتا ہے۔ اس لیے حماس رہنما کی قتل سے صہیونی قبضے کے خلاف مزاحمتی جذبہ بڑھے گا۔

ایرانی ترجمان کے مطابق یہ قتل صرف فلسطین میں مزاحمت کو توانا نہیں کرے گی بلکہ پورے خطے اور دنیا بھر میں آزادی پسندوں کو اس سےجذبہ ملے گا۔ ناصر کنعانی نے اسرائیل کی طرف سے ڈرون حملہ کر کے لبنانی سرحدوں اور خود مختاری کی خلاف ورزی کی بھی مذمت کی ہے۔

واضح رہے منگل کے روز اسرائیل نے لبنان کے بیروت میں ڈرون سے دھماکہ کر کے فلسطینی اعلیٰ رہنما صالح العاروری کو نشانہ بنایا ہے، ان کے ساتھ دیگر تین افراد بھی اس حملے میں جاں بحق ہوگئے۔

بعد ازاں حماس اور حزب اللہ دونوں نے لبنان میں اسرائیلی ڈرون حملے کی تصدیق کی ہے۔ لبنان کی قومی خبر رساں ایجنسی نے کہا ہے کہ اسرائیلی ڈرون حملے کے نتیجے میں چار افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ تاہم اس بارے میں ابھی تک اسرائیلی حکام تبصرہ کرنے سے انکاری ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں