حماس کے عہدیدار صالح العاروری کے جنازے میں سوگواروں کی بڑی تعداد میں شرکت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

تحریک حماس کے نائب سربراہ صالح العاروری کی بیروت میں نمازہ جنازہ کے موقع پر ہزاروں سوگواروں نے شرکت کی۔

حماس پولٹ بیورو کے نائب سربراہ صالح العاروری کو اسرائیلی ڈرون حملے میں منگل کی رات قتل کر دیا گیا تھا۔ اسرائیل نے براہ راست اس ڈرون حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے؛ البتہ اس حملے کی سارے شواہد کا کھرا اسرائیل ہی کی طرف جاتا دکھائی دیتا ہے۔

ڈرون حملے کے فوری بعد حماس اور اس کے اتحادی لبنانی حزب اللہ نے اس ڈرون حملے کا ذمہ دار اسرائیل کو ٹھہرایا ہے۔

حماس کے اہم رہنما کی منگل کے روز بیروت میں اسرائیلی ڈرون حملے کے نتیجے میں قتل ہوئے تھے۔ اس واقعے کو اسرائیل کے لیے پچھلے تین ماہ کی پھیلی جنگ میں ایک بڑی کامیابی کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ تاہم اسرائیل نے اس ڈرون حملے کی ذمہ داری نہیں لی جیسا کہ اسرائیل عموما اپنے ہاتھوں کی گئی ہلاکتوں کی ذمہ داری کم ہی قبول کرتا ہے۔

واضح رہے کہ صالح العاروری کی ہلاکت سے ایک ہفتہ قبل پاسداران انقلاب کے سینئر کمانڈر سید رضی موسوی کو دمشق میں اسرائیل نے ڈرون حملے کے نتیجے میں ہلاک کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں