کون کیا ہے: شہزادی حیفہ آل مقرن، اسپین میں سعودی سفیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شہزادی حیفہ آل مقرن کو حال ہی میں اسپین میں سعودی عرب کی سفیر مقرر کیا گیا تھا۔ انہوں نے مختلف ممالک کے لیے نامزد دیگر سفراء کے ہمراہ منگل کو ریاض کے عرقہ پیلس میں شاہ سلمان کے سامنے حلف لیا۔

اس سے قبل شہزادی حیفہ نے 2020 سے 2023 تک اقوامِ متحدہ کی تعلیمی، سائنسی اور ثقافتی تنظیم یونیسکو میں سعودی عرب کی مستقل نمائندہ کے طور پر خدمات انجام دیں۔

2021 میں شہزادی حیفہ کو دو سالہ مدت کے لیے یونیسکو کے ایگزیکٹو بورڈ پروگرام اور بیرونی تعلقات کمیشن کی سربراہی کے لیے منتخب کیا گیا۔

2009 میں انہوں نے اقوامِ متحدہ کے ترقیاتی پروگرام کے ساتھ کام شروع کرنے سے پہلے مختصر طور پر شاہ سعود یونیورسٹی میں لیکچر دینے کا جز وقتی کردار ادا کیا۔ 2013 میں انہیں سماجی ترقی اور انسانی حقوق کا احاطہ کرتے ہوئے وہاں پروگرام تجزیہ کار کے کردار پر ترقی دے دی گئی۔

انہوں نے 2016 میں وزارتِ اقتصادیات و منصوبہ بندی میں پائیدار ترقی کے اہداف کے شعبے کی سربراہ کے طور پر شمولیت اختیار کی اور 2017 میں پائیدار ترقی کے امور کے لیے معاون نائب وزیر مقرر ہوئیں۔

اس نے 2018 سے وزارتِ اقتصادیات و منصوبہ بندی کے تحت جی 20 امور کی اسسٹنٹ نائب وزیر کے طور پر بھی خدمات انجام دیں۔ اسی سال وہ دوسرے شہری منصوبہ بندی فورم میں اسپیکر بن گئیں - جو نوجوانوں کو بااختیار بنانے اور انسانی حقوق کی وکالت میں ان کی مہارت کا ثبوت تھا۔

شہزادی حیفہ نے 2000 میں ریاض کی شاہ سعود یونیورسٹی سے معاشیات میں بیچلر کی ڈگری حاصل کی اور 2007 میں لندن یونیورسٹی کے اسکول آف اورینٹل اینڈ افریقن اسٹڈیز سے شرقِ اوسط کے حوالے سے معاشیات میں سائنس میں ماسٹرز ڈگری حاصل کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں