سعودی عرب: عربی لینگویج اکیڈمی میں بچوں کے مقابلے میں تقسیم انعامات کی تقریب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ریاض میں قائم ایک مرکز کنگ سلمان گلوبل اکیڈمی فار عربی لینگوئج (کے ایس جی اے اے ایل) جس کا مقصد عربی زبان کو فروغ دینا ہے، نے حال ہی میں ریاض میں منعقدہ ایک اختتامی تقریب میں بچوں کے قرأت چیلنج 3 کے فاتحین کو اعزاز سے نوازا۔

اس تقریب میں ہیومن کیپبلیٹی ڈویلپمنٹ پروگرام کی ڈپٹی سی ای او ڈاکٹر بدور الریس اور وزارتِ تعلیم کے انڈر سیکرٹری ڈاکٹر حسن بن محسن خرمی کے علاوہ فاتحین کے والدین، ماہرین اور مقابلے میں شریک سکولوں کے ملازمین نے شرکت کی۔

چیلنج جس کی مجموعی انعامی رقم 200,000 سعودی ریال ($53,000) سے زیادہ تھی، نے پانچ سے 12 سال کی عمر کے بچوں میں سے 30 فاتحین کو اعزاز سے نوازا۔ 33 ممالک کے 6,000 سے زیادہ بچے شریک ہوئے۔

سابقہ چیلنج سے جیتنے والے عمر الخیر نے کے ایس جی اے اے ایل کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر عبداللہ الواشمی کی جانب سے تقریر کی۔

انہوں نے سعودی وزیرِ ثقافت شہزادہ بدر بن عبداللہ بن فرحان کی طرف سے فراہم کردہ تعاون کو سراہا جو اکیڈمی کے بورڈ آف ٹرسٹیز کے چیئرمین بھی ہیں۔

انہوں نے کہا، "اس چیلنج کے تیسرے ایڈیشن میں گذشتہ دو ایڈیشنز کے مقابلے میں زبردست تعامل دیکھنے میں آیا۔ اس کے علاوہ شاعرانہ قرأت کے فن میں نوجوانوں کو صلاحیتوں کا مظاہرہ کرنے، کلاسیکی عربی میں بات کرنے اور قابلیت کے حامل بچوں کو اپنی لسانی اور فنکارانہ صلاحیتوں کو پیش کرنے کا موقع فراہم کیا گیا۔

"یہ چیلنج عرب عوام کو لسانی اختراعات دیکھنے کے قابل بناتا ہے جو دوسرے شعبوں میں ہونے والی اختراعات سے کم نہیں ہیں۔ یہ سب کے ایس جی اے اے ایل کے تزویراتی مقاصد کے مطابق ہے۔

بچوں کے قرأت چیلنج 3 میں 30,000 ریال کا اول انعام سعودی عرب کے سعد محمد الخواطر کو ملا۔ 25,000 ریال کا دوسرا انعام مراکش کے مصعب عبدالرحمٰن عبدالحمید جبکہ تیسرا انعام 20,000 ریال فلسطین کے رمضان محمود ابو جزر کو دیا گیا۔

چوتھی سے 10ویں پوزیشن کے فاتحین میں سے ہر ایک کو 10,000 ریال ملے۔ 11 ویں سے 15 ویں پوزیشن تک کو 5,000 ریال فی کس ملے جبکہ 16 ویں سے 30 ویں نمبر والوں کو 3,000 ریال فی کس دیئے گئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں