غزہ پر اسرائیلی قبضے اور فلسطینیوں کے انخلاء کا اسرائیلی بیان قابل مذمت ہے: یو اے ای

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

متحدہ عرب امارات نے اسرائیلی وزراء کے غزہ پر اسرائیلی قبضے، یہودی بستیوں کے قیام اور فلسطینیوں کے انخلاء سے متعلق بیانات کی سخت مذمت کی ہے۔ یہ بیانات اسی ہفتے کے دوران اسرائیل کے انتہاپسند وزرا بذلیل سموٹریچ اور ایتمار بین گویر کی طرف سے سامنے آئے تھے۔

متحدہ عرب امارات نے یہ مذمتی بیان جمعرات کے روز دیا ہے۔ دونوں وزیروں نے غزہ سے فلسطینیوں کے انخلاء پر زور دیا تھا۔

وزیر خزانہ سموتریچ اور اسرائیل کے قومی سلامتی کے وزیربین گویر نے کہا تھا ، ہمیں فلسطینیوں کے غزہ سے نکلنے کی حوصلہ افزائی کرنی چاہیے۔ اور ایسے ملکوں کی تلاش کرنی چاہیے جو غزہ کے رہنے والے ان فلسطینیوں کو اپنے ہاں جذب کر لیں۔

متحدہ عرب امارات نے اس سوچ اور بیانات کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے اور اسرائیلی وزراء کے ان بیانات کو انتہا پسندانہ قرار دیا ہے۔ ان اسرائیلی وزراء نے غزہ پر اسرائیل کے دوبارہ قبضے کا بھی کہا ہے تاکہ یہودیوں کی آباد کاری کے لیے غزہ میں یہودی بستیاں بھی قائم کی جا سکیں۔

مذمتی بیان میں مزید خبردار کیا گیا کہ مزید کشیدگی اور عدم استحکام کا خطرہ ہے۔ اسی لیے خون ریزی کو ختم کرنے، انسانی امداد کی فوری، محفوظ اور بلا روک ٹوک ترسیل کو آسان بنانے کے لیے انسانی بنیادوں پر فوری جنگ بندی کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں