شمالی عراق میں امریکی فوجیوں پر ڈرون حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراقی کردستان کی انسدادِ دہشت گردی سروس نے بتایا کہ جمعہ کو ایک مسلح ڈرون نے عراق کے الحریر مرکز کو نشانہ بنایا جہاں امریکی اور بین الاقوامی افواج تعینات ہیں۔

سروس کے بیان میں اس بات کی وضاحت نہیں کی گئی کہ آیا اس حملے میں جانی یا انفراسٹرکچر کا نقصان ہوا۔

عراق میں اسلامی مزاحمت نامی ایک گروپ نے کہا ہے کہ اس نے الحریر فوجی مرکز پر ڈرون کے ذریعے حملہ کیا ہے۔

پینٹاگون نے کہا کہ جمعہ کی کارروائی بغداد میں امریکی فوج کی جانب سے جوابی حملے کے ایک دن بعد ہوئی جس میں ملیشیا کا ایک رہنما ہلاک ہو گیا جس پر امریکی اہلکاروں پر حالیہ حملوں کا الزام ہے۔

اکتوبر میں فلسطینی علاقے غزہ میں اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ شروع ہونے کے بعد سے امریکی فوج عراق اور شام میں کم از کم 100 بار حملوں کی زد میں آ چکی ہے جو عموماً راکٹوں اور یک طرفہ حملے والے ڈرونز کے ساتھ کیے گئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں