غزہ میں اسرائیلی جنگ کے تباہ کن نتائج پراردنی فرمانروا کا امریکی وزیر خارجہ کو انتباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اردن کے ٹیلی ویژن نے اتوار کے روز اعلان کیا ہے کہ اردنی فرمانروا شاہ عبداللہ دوم نے امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلینکن سے ملاقات میں غزہ پر جاری جارحیت کے تباہ کن نتائج سے خبردار کیا ہے۔

شاہ عبداللہ نے غزہ کی پٹی میں المناک انسانی بحران کو ختم کرنے کی ضرورت پر زور دیا اور اردن کی جانب سے مغربی کنارے اور غزہ کی پٹی میں فلسطینیوں کی جبری نقل مکانی کو مکمل طور پر مسترد کردیا۔ انہوں نے کہا کہ فلسطینی علاقوں سے فلسطینیوں کی جبری بے دخلی بین الاقوامی قوانین کی صریح خلاف ورزی ہے۔

اردن کے بادشاہ نے کہا کہ "مسئلہ فلسطین کے منصفانہ حل اور دو ریاستی حل پر مبنی منصفانہ اور جامع امن کے حصول کے بغیر خطے میں دیر پا امن اور استحکام نہیں آئے گا"۔

بے گھر فلسطینی
بے گھر فلسطینی

انہوں نے غزہ کی پٹی میں فوری طبی اور انسانی امداد کی فراہمی اور غزہ کی پٹی پر اسرائیلی بند کرانے کی ضرورت پر زور دیا۔

اردنی وزیر خارجہ کا امریکی ہم منصب سے غزہ میں جنگ بندی کا مطالبہ اس سے قبل عمان میں اپنے امریکی ہم منصب بلینکن کے ساتھ بات چیت کے دوران اردنی وزیر خارجہ ایمن صفدی نے غزہ کی پٹی میں شہری آبادی کے تحفظ کے لیے ضروری اقدامات کرنے اور امداد کی آمد کو یقینی بنانے پر زور دیا۔

اردن کی وزارت خارجہ کے ترجمان سفیان القداہ نے المملکہ سیٹلائٹ چینل پر نشر ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ الصفدی نے اپنے ملک کی جانب سے غزہ کی پٹی میں فوری جنگ بندی کے مطالبے پر زور دیا جہاں انسانی تباہی بڑھ رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں