مشرق وسطیٰ

لبنان میں نئی امریکی سفیر کی انوکھی صورتحال میں بیروت آمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

لبنان میں امریکا کی نئی سفیر لیزا جانسن جب اگلی جمعرات کو بیروت پہنچیں گی تو ایک انوکھی صورتحال سے گذریں گی۔ ان کی لبنان میں ایسے وقت میں آمد آمد ہے جب لبنان میں صدارتی خلاء ہے۔ صدر میشل عون کی گذشتہ 30 اکتوبر کو مدت صدارت ختم ہونے کے بعد سے لبنان میں صدر کا عہدہ خالی ہے۔

اس لیے کہ ابھی تک کوئی جانشین منتخب نہیں ہوا ہے۔ امریکی سفیر لبنان میں صدر کی عدم موجودگی کی وجہ سے ایک "چارج ڈی افیئرز" کے طور پر کام کریں گی۔ جب تک کہ ایک نیا صدر منتخب نہیں ہو جاتا۔ جب نیا صدر منتخب ہو گا تو وہ اس کے سامنے اپنی اسناد تقرر پیش کریں گی، مگر ایسے لگتا ہے کہ لبنان میں صدر کے چناؤ کا فی الحال کوئی امکان دکھائی نہیں دیتا۔

دنیا میں سب سے بڑے امریکی سفارت خانے کی تعمیر کا کام ہنوز جاری ہے
دنیا میں سب سے بڑے امریکی سفارت خانے کی تعمیر کا کام ہنوز جاری ہے

امریکی سینیٹ نے تین ہفتے قبل جانسن کو جو اس وقت پرتگالی اور فرانسیسی زبانوں کی ماہر کو سفیر ڈوروتھی شیا کا جانشین مقرر کرنے کے لیے ووٹ دیا تھا۔ شیا لبنان میں سفارتی خدمات کی تکمیل کے بعد امریکا روانہ ہو گئی تھیں۔

وہ اس سے پہلے لبنان کے دارالحکومت میں دو سال مقیم رہیں۔ انہوں نے 2002ء میں سفارت خانے میں خدمات انجام دیں، جب ونسنٹ بیٹل 2001 سے 2004 تک لبنان میں سفیر رہے۔

یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ چھپن سالہ لیزا جانسن "جوکر" کی قسم ہیں جو مختلف کاموں اور خدمات کو انجام دینے کے لیے موزوں ہیں، خاص طور پر ڈپلومیٹک کور کے شعبے میں 31 سال قبل داخل ہوئی تھیں۔ اس دوران وہ متعدد مقامات پر منتقل ہوئیں۔ انہوں نے ناساؤ اور بہاماس میں 2014 سے 2017 کے درمیان سفارتی خدمات انجام دیں۔ پھر وہ 2018 سے 2021 تک نمیبیا میں سفیر رہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کی رپورٹ کے مطابق لیزا جانسن نے "انٹرنیشنل بیورو فار نارکوٹکس کنٹرول اینڈ لا انفورسمنٹ" میں بھی کام کیا اور اکتوبر 2022 میں، وہ قائم مقام نائب معاون وزیر برائے امور خارجہ بنائی گئیں۔

انہوں نے نیشنل وار کالج میں مشیر برائے بین الاقوامی امور کے طور پر بھی کام کیا۔ برسلز میں نیٹو کے سیکرٹری جنرل کے دفتر میں اپنے ملک کی نمائندہ، 2001 میں قومی سلامتی کونسل برائے مشرق وسطیٰ کے امور کی ڈائریکٹر، دفتر کی ڈپٹی ڈائریکٹر۔ کینیڈین امور، اور دفتر برائے نزدیکی مشرقی امور میں اسرائیلی پولیٹیکل-ملٹری آفس کی ڈائریکٹر کے علاوہ یوگنڈا، پاکستان اور جنوبی افریقہ میں امریکی سفارت خانوں میں تعینات رہی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں