اسرائیلی فورسز کی مغربی کنارے میں بڑے پیمانے پر دراندازی، تلاشی کی کارروائیاں

القدس بریگیڈز کا اسرائیلی فوج پر گھات لگا کر حملے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

غرب اردن میں اسرائیلی فوج کی تلاشی کی کارروائیوں کے دوران اسلامی جہاد کے عسکری ونگ القدس بریگیڈز نے دعویٰ کیا ہے کہ اس کے جنگجوؤں نے اسرائیلی فوج پر گھات لگا کر حملہ کیا ہے۔

القدس بریگیڈز کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ غرب اردن کے شمالی علاقے جنین میں چھاپہ مار اسرائیلی فوج کو گھات لگا کر حملہ کیا۔

دوسری جانب غرب اردن کے مختلف علاقوں میں اسرائیلی فوج نے دراندازی کی۔

اسلامی جہاد کے مطابق جنین پر دھاوا بولنے والی اسرائیلی فوج پر براہ راست حملہ کیا جس میں اسے جانی اور مالی نقصان پہنچایا گیا ہے۔

اسرائیلی فوج اور فلسطینی عسکریت پسندوں کےدرمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔

اس سے قبل شہداء الاقصیٰ ٹی وی نے کہا تھا کہ مغربی کنارے کے شہروں میں اسرائیلی دراندازی کی ایک اور لہر میں فلسطینی عسکریت پسندوں کی صبح سویرے جنین میں داخل ہونے والی اسرائیلی فورسز کے ساتھ جھڑپ ہوئی۔

فلسطین ٹی وی کا کہنا ہے کہ جنین اور اس کے کیمپ میں سائرن بج رہے تھے جب کہ اسرائیلی بلڈوزروں نے دراندازی کو انجام دینے کی کوشش کی۔

فلسطینی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ اسرائیلی فورسز نے قلقیلیہ، اریحا، بیت لحم، نابلس اور البیرہ کے شہروں کے علاوہ الخلیل کے جنوب میں واقع السموع قصبے پر بھی دھاوا بول دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں