عراقی مسلح گروپوں کا شام میں کونیک فیلڈ پر حملے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

3 ماہ قبل غزہ کی پٹی پر اسرائیلی جنگ کے نتیجے میں پیدا ہونے والی علاقائی کشیدگی اور عراق اور شام میں امریکی فوجی اڈوں پر حملوں کے تناظر میں عراقی مسلح دھڑوں نے شام میں کونیکو فیلڈ پر میزائل حملےکا دعویٰ کیا ہے۔

ایران کے وفادار اور نام نہاد "عراق میں اسلامی مزاحمت" کے تحت آنے والے ان دھڑوں نے کل بدھ کو ایک بیان میں وضاحت کی کہ انہوں نے مشرقی شام کے دیرالزور دیہی علاقوں میں کونیکو فیلڈ میں امریکی اڈے کو میزائل سے نشانہ بنایا۔

سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے منگل کو اعلان کیا تھا کہ "ڈرونز" کی مدد سے دو گھنٹے سے بھی کم وقت میں دو بار کونیکو فیلڈ میں امریکی اڈے پر حملہ کیا گیا۔

عراق میں امریکی فوج
عراق میں امریکی فوج

تاہم انہوں نے نشاندہی کی کہ زمینی طیارہ شکن توپوں نے اڈے پر حملوں کا جواب دیا تاہم اس حملے میں کسی جانی نقصان کی اطلاع موصول ہوئی۔

آبزرویٹری کے مطابق غزہ پر اسرائیلی جنگ کے آغاز کے بعد شام میں امریکی اڈوں پر یہ 84 واں اور کونیکو فیلڈ پر انیسواں حملہ ہے۔

7 اکتوبر 2023ء کو غزہ کی پٹی میں اسرائیل اورحماس کے درمیان جنگ شروع ہونے کے بعد سے امریکی فوج پہلے ہی عراق اور شام میں میزائلوں اور بارودی سرنگوں کے ذریعے 130 کے قریب حملے کر چکی ہے۔ پینٹاگان کے ترجمان پیٹرک رائڈر نے اس سے قبل اعلان کیا تھا کہ خطے میں کشیدگی کے آغاز سے اب تک امریکی تنصیبات پر 127 حملے ہو چکے ہیں، 52 عراق میں اور 75 شام میں کیے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں