ناقابل یقین: مصر میں مفت کھانا تقسیم کرنے والا ریستوران

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصرمیں غریبوں کے لیے اپنی نوعیت کا پہلا ریستوران کھولا گیاہے جس میں غریبوں اور ضرورت مندوں کے لیے مفت کھانا فراہم کیاجاتا ہے۔ اس ریستوران کو حکومت اور عوامی حلقوں کی طرف سے ایک بہترین مثال قرار دیا گیا ہے۔

گذشتہ روز سماجی یکجہتی کی مصری وزیر نیوین القباج نے "انسانی بھائی چارہ" ریستوران چین کی پہلی شاخ کھولی جو ضرورت مند خاندانوں کو مفت، مربوط کھانا فراہم کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کمیونٹی کی یکجہتی کو فروغ دینے کے لیے سٹیزن سپورٹ پروگرام کو ناصر بینک کے توسط سے سپورٹ فراہم کرے گی۔

مصری وزارت سماجی بہبود نے کہا کہ یہ ریستوراں اس پروٹوکول کے نفاذ کا حصہ ہے جس پر وزارت بہبود اور ہیومن فریٹرنٹی فاؤنڈیشن کے درمیان گزشتہ مئی میں دستخط کیے گئے تھے۔

پری پیڈ کارڈز

وزارت برائے سماجی بہبود نے انکشاف کیا کہ ریسٹورنٹ کا خیال بھائی چارے اور یکجہتی کے اصول پر مبنی ہے۔ معاشرے کے تمام گروہوں کو ان لوگوں کے تعاون سے کھانا فراہم کیا جائے گا جو کھانے کے اخراجات کا بوجھ اٹھانے کے قابل ہیں۔ مستحق خاندانوں کے کھانے کے اخراجات برداشت کرنے کے لیے پری پیڈ کارڈز جاری کیے گئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ اقدام سماجی ذمہ داری کے حامل افراد سے عطیات اور فنڈز جمع کرکے انہیں اس کار خیر میں شامل ہونےکا موقع فراہم کرے گا۔

وزارت سماجی بہبود کے مطابق ریستوران تمام زمروں کے لیے ایک متفقہ مینو پیش کرتا ہے جس میں بہت سے آپشنز شامل ہوتے ہیں۔ کمرشل ریستورانوں میں "ہیپی میل" کے تجربے کی طرح مکمل غذائیت اور صحت کی اہمیت کے حامل بچوں کے لیے کھانے کے آپشنز ہوتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں