اسرائیلی آئس ہاکی ٹیم کو حفاظتی خدشات کے پیشِ نظر بین الاقوامی مقابلوں سے روک دیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

آئس ہاکی کے کھیل کی گورننگ باڈی نے بدھ کو تادیر حفاظتی خدشات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اسرائیل آئس ہاکی ٹیم کو بین الاقوامی مقابلوں میں حصہ لینے سے روک دیا گیا ہے۔

بین الاقوامی آئس ہاکی فیڈریشن (آئی آئی ایچ ایف) نے کہا کہ اس نے "اسرائیلی قومی ٹیم کو آئی آئی ایچ ایف چیمپئن شپ میں شرکت سے اس وقت تک محدود رکھنے کا فیصلہ کیا ہے جب تک تمام (بشمول اسرائیلی) شرکاء کی حفاظت اور صحت یقینی نہ بنا لی جائے۔"

حماس کے مزاحمت کاروں نے 7 اکتوبر کو اسرائیل کی تاریخ کے مہلک ترین حملے میں 1,200 اسرائیلیوں کو ہلاک کر دیا تھا جس کے بعد اسرائیل کی جانب سے جوابی زمینی اور فضائی کارروائی کی گئی۔

غزہ کے محکمۂ صحت کے حکام کے مطابق تین ماہ سے جاری اسرائیلی بمباری میں 23,000 سے زائد افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔

گذشتہ سال آئی آئی ایچ ایف نے یوکرین پر ماسکو کے حملے کے بعد تمام روسی اور بیلاروسی قومی ٹیموں اور کلبوں کو ہر عمر کے زمرے کے بین الاقوامی مقابلوں میں شرکت کو معطل کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور اپنے فیصلے کو درست ثابت کرنے کے لیے ایسے ہی حفاظتی بیانات دیئے تھے۔

اسرائیل کی آئس ہاکی فیڈریشن فوری طور پر تبصرہ کرنے کے لیے دستیاب نہیں تھ

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں