شاہ سلمان شاہی ریزرو میں 10 لاکھ پودوں کی شجر کاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شاہ سلمان بن عبدالعزیز رائل ریزرو ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور نیشنل سینٹر فار ویجیٹیشن ڈیولپمنٹ اینڈ کمبیٹنگ ڈیزرٹیفکیشن نے 13 مقامی جنگلی پودوں کی انواع کے شاہ سلمان ریزرو کے 10 لاکھ پودوں کی کاشت کاری کی ہے۔

لگائے گئے پودوں میں ببول، سدر، ارطیٰ، غضی اور دیگر مقامی جنگلی پودوں کی انواع شامل ہیں جو قدرتی طور پر ریزرو کی زمینوں میں اس کے دائرہ کار میں تین مختلف جنگلاتی مقامات وادی معارک، قاع بوہان اور المغیراء میں اگتے ہیں۔

اتھارٹی نے کہا کہ ان پودوں کو لگانے سے آکسیجن پیدا کرنے، ٹنوں کی مقدار میں کاربن جذب کرنے، پودوں کا احاطہ بڑھانے اور ریت کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔

سعودی خبر رساں ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق شاہ سلمان بن عبدالعزیز رائل ریزرو مشرق وسطیٰ کا سب سے بڑا قدرتی جنگلی حیات کا ذخیرہ ہے جس کا رقبہ 130,700 مربع کلومیٹر ہے۔ یہ چار انتظامی علاقوں الجوف۔ العلا، شمالی سرحدی علاقے اور تبوک کوآپس میں ملاتا ہے۔ اس میں متنوع قدرتی رہائش گاہیں، منفرد ٹوپوگرافی اور منفرد جغرافیائی شکلیں ہیں۔

شاہ سلمان ریزور
شاہ سلمان ریزور

یہ بات قابل غور ہے کہ نیشنل سینٹر فار ویجیٹیشن ڈیولپمنٹ اینڈ کامبیٹنگ ڈیزرٹیفیکیشن مملکت میں پودوں کی جگہوں کی حفاظت، سبز جگہوں میں تمام متغیرات کا مطالعہ کرنے، خشک سالی کے لیے تیاری کرنے اور خشک سالی کی شدت کو کم کرنے کی صلاحیت کو فروغ دینے کے لیے کام کرتا ہے۔

اس کے علاوہ ریگستانی اور خشک سالی کے اثرات کو کم کرنے، چراگاہوں کی زمینوں، جنگلات اور قومی پارکوں میں نگرانی اور سرمایہ کاری کرنے کے علاوہ سرسبز رقبہ بڑھانے کے مملکت کے وژن 2030 کے اہداف کے حصول کو ممکن بنانا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں