مشرق وسطیٰ

غزہ میں اسرائیلی بمباری جاری، انٹرنیٹ سروس ایک بار پھر معطل کر دی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سات اکتوبر سے بدترین اسرائیلی بمباری سے بری طرح تباہ ہو چکے فلسطینی آباد کے بڑے مرکز غزہ میں ٹیلی کام سروسز فراہم کرنے والی کمپنیوں نے جمعہ کے روز سے ایک بار پھر انٹرنیٹ اور اس سے متعلق سروسز کو بند کر دیا ہے۔

سروسز کی فراہمی کرنے والی بڑی کمپنی' پال ٹیل' کے مطابق یہ اسرائیلی کی بڑھی ہوئی بمباری کے باعث کیا گیا ہے۔ ممکن نہیں رہا ہے کہ بمباری کے دوران سروس مہیا کی جا سکے۔

اس انٹرنیٹ آپریٹر کی طرف سے کہا گیا ہے کہ ’’ہم افسوس سے اعلان کرتے ہیں کہ غزہ میں جاری جارحیت کی وجہ سے ٹیلی کام کے شعبے کی تمام خدمات ختم ہو کر رہ گئی ہیں۔‘‘

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ' ایکس ' پر اپنی ایک پوسٹ میں' پال ٹیل۔ نامی کمپنی ٹیلی کام کمپنی نے کہا ہے ' غزہ ایک بار پھر مواصلاتی بلیک آؤٹ کا شکار بن گیا ہے۔ '

واضح رہے اسرائیل کی غزہ پر سات اکتوبر سے تباہ کن بمباری جاری ہے۔ امریکہ اور مغربی ملکوں نے اس سلسلے میں اسرائیل کی پشت پر کھڑے رہنے کا اعلان کر رکھا ہے تاکہ فلسطینی مزاحمتی تحریک حماس کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔

اس مسلسل بمباری اور عالمی طاقتوں کی حمایت کے حصول میں اسرائیل نے اب تک تقریباً 24 ہزار فلوطینیوں کو ہلاک۔ تقریباً 60 ہزار کو زخمی کیا ہے۔ جبکہ 23 لاکھ کے قریب فلسطینی شہری بے گھر ہو چکے ہیں۔

زیر محاصرہ غزہ میں سارا سول انفراسٹرکچر اسرائیلی بمباری نے تباہ کر دیا ہے۔ اب تک کئی بار مواصلاتی بلیک آؤٹ بھی کیا جا چکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں