فلسطین اسرائیل تنازع

اسرائیل نے غزہ میں لڑنے والی چار میں سے ایک ڈویژن فوج کو واپس بلا لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

غزہ کی پٹی پر 102 دن کی جنگ کے بعد ٹائمز آف اسرائیل نے اطلاع دی کہ اسرائیلی فوج نے غزہ سے اپنے چار جنگی ڈویژنوں میں سے ایک کو واپس بلا لیا۔

"طویل جنگ"

اخبار نے بتایا کہ غزہ کی پٹی سے فوج کے 36 ویں ڈویژن کا انخلاء اس کے منصوبوں کے فریم ورک میں آتا ہے جس میں حماس کے ساتھ طویل جنگ کے لیے افواج کی کارکردگی کو برقرار رکھنا ہے۔

وقفہ کا وقت

اخباری رپورٹ کے مطابق اس ڈویژن کی افواج ایک مختصر وقفہ لیں گی اور پھر دوبارہ تیاری کریں گی۔اس کے بعد فوج فیصلہ کرے گی کہ آیا اسے دوبارہ تعینات کرنا ہے یا نہیں اور اسے تازہ ترین تشخیص کی بنیاد پر کہاں تعینات کیا جائے گا۔

اسرائیلی رپورٹس کے مطابق حالیہ مہینوں میں غزہ کی پٹی میں لڑائی میں 36ویں ڈویژن نے اہم کردار ادا کیا۔

تین ڈویژن غزہ میں موجود

اسپیشل فورسز کے ساتھ اب بھی غزہ کی پٹی میں تین جنگی ڈویژن موجود ہیں، جو پورے غزہ میں لڑ رہے ہیں۔

اسرائیل نے غرب اردن کی بگڑتی صورت حال کے پیش نظر غزہ سے ڈوڈیوان اسپیشل فورسز یونٹ کو مغربی کنارے منتقل کر دیا ہے۔

گولانی بریگیڈ کا انخلاء

گذشتہ دسمبرمیں اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی سے گولانی بریگیڈ کو 60 دن کی لڑائی کے بعد واپس بلا لیا تھا، جس میں اسے بریگیڈ کی صفوں کو دوبارہ منظم کرنے کے الزامات کے تحت بھاری نقصان اٹھانا پڑا تھا۔

اس نے اپنی صفوں کو دوبارہ منظم کرنے کے لیے غزہ کے شمال اور جنوب میں کام کرنے والی قابض فوج میں چھاتہ بردار بریگیڈ سے بٹالین کو بھی واپس لے لیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں