فلسطین اسرائیل تنازع

شمالی غزہ کے رہائشیوں کو ریلیف فراہم کرنے کے لیے ایک نئے راستے کی تجویز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اقوام متحدہ کی تین امدادی ایجنسیوں نے پیر کے روز اسرائیل پر زور دیا کہ وہ غزہ کے شمال میں واقع اشدود کی بندرگاہ تک انسانی امداد کی فوری ترسیل کے لیے رسائی کی اجازت دے۔

نئے راستے

ورلڈ فوڈ پروگرام، یونیسیف اور ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی طرف سے جاری کردہ مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ غزہ کی محصور آبادی جنہیں غذائی قلت کے بڑھتے ہوئے خطرے کا سامنا ہے تک خوراک اور سامان کی ترسیل کا انحصار امداد کے داخلے کے لیے نئے راستے کھولنے پر بھی ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ غزہ کی سرحد سے 40 کلومیٹر شمال میں واقع اشدود کا استعمال "امدادی اداروں کے لیے انتہائی ضروری ہے" جب کہ تنظیموں نے غزہ میں انسانی امداد کے بہاؤ میں بنیادی تبدیلی" کا مطالبہ کیا۔

بڑی مقدار میں سامان کی ترسیل

اقوام متحدہ کی ایجنسیوں نے کہا کہ انسانی ہمدردی کے اداروں کو اس بندرگاہ کو استعمال کرنے کی اجازت دینے سے "بہت زیادہ مقدار میں امداد بھیجی جائے گی اور پھر اسے ٹرکوں پر غزہ کے سب سے زیادہ متاثرہ شمالی علاقوں تک پہنچانے میں مدد ملے گی جہاں اب تک صرف چند قافلے ہی پہنچ پائے ہیں۔

اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ 100 دن سے زیادہ ہوگئی ہے۔ یہ جنگ غزہ کے 2.4 ملین باشندوں کے لیے ایک انسانی تباہی کا باعث بنی ہے، جنہیں خوراک، پانی، ایندھن اور صحت کی دیکھ بھال کے حصول میں مشکلات کا سامنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں