ایران سعودی عرب کے ساتھ تجارتی تعلقات کو مضبوط بنانے کے لیے کوشاں ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر علی رضا عنایتی نے سعودی عرب کے ساتھ اپنے اقتصادی تعلقات کو فروغ دینے اور تجارتی اور سرمایہ کاری کے تبادلے کی سطح کو بلند کرنے کے لیے اپنے ملک کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران سعودی عرب کے ساتھ تجارتی تعلقات کو بلند ترین سطح پر لے جانا چاہتا ہے۔

منگل کو ایرانی سفیرنے ریاض میں فیڈریشن آف سعودی چیمبرز کے صدر حسن الحویزی سے ملاقات کی۔ اس دوران دونوں ممالک کے درمیان تجارتی اور سرمایہ کاری کے تعلقات کو دوبارہ ٹریک کرنے اور وفود کے تبادلے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

دونوں ممالک کے درمیان ان کی غیر ملکی تجارت کی وسعت کے باوجود کوئی تجارتی تبادلہ نہیں ہے۔ 2022ء میں سعودی تجارتی تبادلے کا حجم تقریباً 601.1 بلین ڈالر تک پہنچ گیا، جب کہ ایران کی غیر ملکی تجارت کا حجم 132.6 بلین ڈالرتک پہنچ گیا۔

ملاقات میں مثبت ماحول میں سرمایہ کاری کرنے، طے شدہ معاہدوں کو فعال کرنے، اقتصادی تعاون میں ایک نیا باب کھولنے اور دستیاب مواقع اور دونوں ممالک کی غیر ملکی تجارت کے حجم کے تناسب سے تجارتی تبادلے کی سطح کو بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا گیا۔

دونوں فریقوں نے تجارتی وفود کے دوبارہ تبادلے، تجارتی تبادلے کو تحریک دینے، ہدف بنائے گئے شعبوں میں انضمام کے حصول اور کاروباری شعبوں کے درمیان کامیاب شراکت داری قائم کرنے اور سعودی اور ایرانی سرمایہ کاروں کوایک دوسرے ممالک میں سرمایہ کاری کی ترغیب دینے پر زور دیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں