شاہ سعود یونیورسٹی کو پاکستانی کی بائیومیٹرکس سیکیورٹی ایجاد پر امریکی پیٹنٹ مل گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شاہ سعود یونیورسٹی میں پاکستانی سائنسدان کے زیر قیادت بنائی گئی ایجاد کو امریکی ادارے نے تسلیم کرتے ہوئے پیٹنٹ کر لیا۔ یونیورسٹی نے بتایا ہے کہ یہ ایجاد محفوظ بایومیٹرک شناخت کے نفاذ کے طریقے اور نظام کے لیے ہے۔

سعودی عرب کے نیشنل پلان برائے سائنس و ٹیکنالوجی کے تحقیقاتی فنڈ کے ذریعے یہ ایجاد کی گئی ہے۔ سائنسدانوں کی ٹیم کی قیادت پاکستان سے تعلق رکھنے والے پروفیسر ڈاکٹر محمد خرم خان نے کی ہے۔

شاہ سعود یونیورسٹی کی ویب سائٹ پر بتایا گیا ہے کہ ڈاکٹر محمد خرم خان، ڈاکٹر ایل لینگ اور پی ایچ ڈی کے طالب علم ڈیبلیو ٹینگفی نے آرٹیفیشل انٹیلیجنس کی مدد سے بایومیٹرک شناخت سے متعلق بہترین طریقہ کار ایجاد کیا ہے۔

یہ ایجاد کمپیوٹر کی دنیا میں ایک گیم چینجر کے طور پر سامنے آئی ہے۔ یہ ہیشنگ نیٹ ورکنگ کو استعمال کرتی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ اس میں مبہم کمٹمنٹ سکیم کا استعمال کیا جاتا ہے۔ جو روایتی ٹیکسچر کوڈ سے بہت چھوٹے ہوتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں