اسرائیل کا دمشق میں پاسداران انقلاب کی میٹنگ پر حملہ، ایرانی عہدیدار سمیت پانچ ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے دمشق میں ایرانی سفارتخانے کے قریب واقع ایک عمارت پر بمباری کی جس کے نتیجے میں ایرانی پاسداران انقلاب کے ایک انٹیلی جنس کمانڈر سمیت کم از کم پانچ افراد ہلاک ہوگئے۔

رہائشی عمارت پر حملہ

العربیہ کے ذرائع کے مطابق تین اسرائیلی جنگی طیاروں نے مزہ کے علاقے میں ایک رہائشی عمارت پر دو میزائل داغے جس کے نتیجے میں ایک چار منزلہ عمارت منہدم ہوگئی۔

اس دھماکے کے فوری بعد کے مناظر کی ویڈیو بھی منظر عام پر آچکی ہے

پاسداران انقلاب کے کمانڈر کی ہلاکت

شام میں حکومت نواز اتحاد کے ایک ذرائع نے خبر رساں ایجنسی رائیٹرز کو تصدیق کی ہے کہ حملے میں ایرانی پاسداران انقلاب کا ایک کمانڈر مارا گیا۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ جس عمارت کو نشانہ بنایا گیا اسے ایرانی فوجی مشیر استعمال کرتے تھے۔

پانچ ہلاکتیں

شامی خبر رساں ایجنسی ’سانا‘‘ کی ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اسرائیلی حملے کا نشانہ دارلحکومت کے وسط میں ایک رہائشی عمارت تھی۔ حملے کا نشانہ المزہ کا علاقہ تھا جہاں زیادہ تر مغربی طرز کے ویلاز موجود ہیں۔

انسانی حقوق کی رصدگاہ کے سربراہ نے دھماکے میں پانچ افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق کی ہے۔

العربیہ نیوز چینل پر تبصرہ کرتے ہوئے انسانی حقوق کی رصدگاہ کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمان نے بتایا کہ دھماکہ دمشق کے اس علاقے میں ہوا جہاں پر تحریک جہاد اور حزب اللہ کی قیادت رہائش پذیر ہوتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں