ریاض میں قبائلی منافرت پر اکسانے کے الزام میں 10 افراد گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے دارالحکومت ’ریاض‘ کی ریجن پولیس کے کریمنل انویسٹی گیشن ڈیپارٹمنٹ نے سوشل میڈیا سائٹس پر قبائلی منافرت پر مشتمل مواد نشر کرنے کے الزام میں 10 افراد کو گرفتار کیا ہے۔

پبلک سکیورٹی ڈاریکٹوریٹ نے "ایکس" پلیٹ فارم پراپنے آفیشل اکاؤنٹ پران کی گرفتاری کی تفصیلات شائع کیں۔ ان میں بتایا گیا ہے کہ ابتدائی طور پر 6 افراد کی گرفتاری عمل میں لائی گئی تھی بعد ازاں ان میں مزید چار افراد کو حراست میں لیا گیا۔

ان کے خلاف ملک میں قبائیلی منافرت پھیلانے کے الزام میں قانون کے مطابق کارروائی شروع کردی گیی ہے اور انہیں مجاز اتھارٹی کے پاس بھیج دیا گیا ہے۔

پبلک پراسیکیوشن نےکہا کہ سوشل میڈیا یا انفارمیشن نیٹ ورک کے ذریعے امن عامہ کو نقصان پہنچانے والی کسی بھی سرگرمی یا غلط معلومات افشاء کرنے پر سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔
استغاثہ نے ایک بیان میں کہا کہ جرم کے مرتکب ملزمان کو جرم ثابت ہونے پر پانچ سال تک قید اور تیس لاکھ ریال تک جرمانے کی سزا یا دونوں سزائیں دی جائیں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں