حزب اللہ یک طرفہ جنگ بندی کرے تب بھی ہم حملے نہیں روکیں گے: گیلنٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی وزیر دفاع ’یو آو گیلنٹ‘ نے کہا ہے کہ اگر لبنانی حزب اللہ یکطرفہ طور پر جنگ بندی کرے تب بھی اسرائیل فائرنگ نہیں روکے گا۔ انہوں نے خبردار کیا کہ جنگ اسرائیل کے لیے مشکل ہوگی، لیکن حزب اللہ اور لبنان کے لیے تباہ کن ہوگی۔

اپنے فرانسیسی ہم منصب سیبسٹین لیکورنو سے ملاقات کے دوران گیلنٹ نے کہا کہ "اگر حزب اللہ یکطرفہ طور پر فائربندی کر دے تب بھی اسرائیل اس وقت تک فائرنگ بند نہیں کرے گا جب تک کہ شمال کے باشندوں کی ان کے گھروں کو محفوظ واپسی کی ضمانت نہیں دی دی جاتی"۔

گیلنٹ نے مبینہ طور پرجنوبی لبنان میں سلامتی کی صورتحال کو تبدیل کرنے اور حزب اللہ کو سرحد سے ہٹانے کے لیے فرانس کے عزم کے لیے لیکورنو کا بھی شکریہ ادا کیا۔

گیلنٹ نے اس بات پر زور دیا کہ "امریکی انتظامیہ کی قیادت میں سیاسی کوششوں کے فریم ورک کے اندر شمالی سرحد پر سلامتی کی صورتحال کو مستحکم کرنے کی بین الاقوامی خواہش میں فرانس کا ایک اہم کردار ہے"۔

انہوں نے مزید کہا کہ " ہم فوجی ذرائع سے بھی رہائشیوں کی واپسی کے لیے ایک محفوظ صورتحال پیدا کرنے کی تیاری کر رہے ہیں"۔

قبل ازیں اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے فرانسیسی وزیر برائے مسلح افواج سیبسٹین لیکورنو کو یقین دلایا کہ "حزب اللہ کو سرحد سے ہٹانا اسرائیل کے لیے ایک اہم ہدف ہے"۔

لیکورنو 7 اکتوبر کو غزہ میں جنگ شروع ہونے کے بعد دوسری بار اسرائیل کا دورہ کر رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں